کاشر رسالہ واد (قسط 2 )


وادک زو دار حصہ اوس امکۍ خط۔ یم ٲسۍ نہ ژھوژۍ – رسالہ کہ گیٹ اپکۍ تعریف یا ادارہ کہ کاشرِ زبانۍ ہند ژکۍ در آسنکۍ تعریف، بلکہ اوس یمن منز بحث و مباحثہ، کھلہ اعتراض تہ گرفت تہ سوال جواب۔ یمن خطن ہندۍ محرک ٲسۍ اکثر امکۍ کھرۍ دار اداریہ نتہ کنٹروورشل مضمون تہ تبصرہ۔ بعضے تخلیقاتن پیٹھ پرن والین ہنز راے یمن منز شفیع شوق اہم تہ مثبت رول ادا کران رود۔ خط لیکھن والۍ ٲسۍ نہ لفظو دادِ چۅرتہ۔ کانہہ خط اوس نہ اکہ کالمہ کم تکیازِ کتھے آسہ تژھہ۔ میہ چھہ نہ باسان کاشرِ ادبک کانہہ رسالہ کیا ہیکہِ اتھ معاملس منز وادس مقابلہ کٔرتھ۔ پریتھ پرن وول اوس رسالہ رٹۍ تھے امکۍ خط گۅڈہ پران، پتہ اداریہ تہ باقی چیز۔ کینزن خطن منز آیہ ذاتیات تہِ چکاونہ۔

امہِ رسالچ بڈ کمزوری ٲس یہ زِ یہ ہیوک نہ ادبس منز کانہہ نہج پیدہ کٔرتھ، امۍ چکاوۍ سوال، سوالن ہندۍ حل نہ۔ امۍ تل شور مگر وتہ ہاوک بنیوو نہ۔ شاید اوس نہ امیک سہ مقصد تہِ۔ اتھ رسالس منز چھپن والۍ حضرات ٲسۍ اداریہن تہ تبصرن ہندِ منفی رویچ تہ قابل اعتراض زبانۍ ہنز اکثر شکایت کران۔

fahim
اقبال فہیم، واد رسالک روح رواں

رسالہ کس تریمس شمارس منز چھپیوو غلام رسول سنتوش سند مضمون” کشیر تہ کاشرِ زبانۍ متعلق اکھ سونچن تراے”۔ یہ اوس دراصل اختر محی الدین سندِ مضمون کس ردعملسے منز لیکھنہ آمت، مگر براہ راست نہ۔ سنتوش چھہ تمہیدس منز لیکھان ” میہ ٲس راے بہ لیکھہ براہ راست کشیرِ ہنزن جایہ ناون متعلق، مگر کینہہ بنیادی مشکل مدنظر تھٲوتھ زون میہ مناسب زِ بہ کرہ گۅڈہ ہارِ پربت تہ ینترس متعلق ہنا زان۔” شنتوش اوس انتہایی ذہین ادیب۔ یہ ذہانت ٲس اتھ مضمونس منز تہِ ننۍ۔ یہ اوس سہ بٹہ فلسفہ یتھ سنتوش دھیانہ تہ گیانہ سنیوومت اوس تہ یتھ پیٹھ تسنزِ مصوری ہنز تہِ بنیاد ٲس۔ سنتوش سند یہ مضمون آو نہ پرن والین سمجھ کینژھا امہ کس فلسفس سیتۍ نا آشنایی کنۍ، کینژھا امہ چہ ہندی آمیز زبانۍ کنۍ تہ کینژھا تمہ کرتب بازی کنۍ یمہ سیتۍ سہ "کاو” لفظس دُبہ پھرِتھ "واک” تہ پرانہ شکتی ہندۍ ہٲ، ٲ، سٲ تہ شٲ اکی کۅمبہ ہندۍ زٲنتھ "شول” لفظس "حول” بناوان چھہ۔ امہِ مضمونک ہرتر اوس زِ کاشرِ زبانۍ تہ ناون ہنز روایت زاننہ خاطرہ چھہ بٹہ ریژن تہ رواجن سنن ضروری تکیازِ یمن منز چھہ پریتھ کتھہِ ہند جواب موجود۔

سنتوش سند بیاکھ مضمون چھپیوو شیمس شمارس منز یتھ منز تمۍ تمن سوالن ہند جواب دنچ کوشش ٲس کرمژ یم ژورمہ شمارہ کس اداریہس منز اقبال فہیمن تلۍ متۍ ٲسۍ۔ اقبال اوس فنی، موضوعاتی، نظریاتی، اسلوبیاتی تہ جمالیاتی پہلوون ہنز کتھ تُلتھ یہ پرژھان زِ شاعری کُس چیز چھہ شاعری بناوان۔ یودوے سنتوش سندس مضمونس منز سیٹھا اہم تہ دلچسپ کتھہ وننہ آسہ آمژ، تسند تحریر اوس بییہ اکہ لٹہِ اکس مخصوص لفظہ ووترس سیتۍ سیتۍ غیر مانوس تصوراتن ہند ورتاو کران۔ دراصل اوس یہ سنتوش سند طرز تحریر بنیوومت۔ سہ اوس امچ سفارش سیٹھا زورہ شورہ کران۔ چناچہ چھپیوو نٔومس شمارس منز سنتوش سند اکھ خط یتھ عنوان اوس دتھ "کاشرس منز چھہ نہ صحیح تہ صحت مند روپ وۅتلان”۔ اتھ منز اوس باقی کتھن علاوہ یہ وننہ آمت زِ کاشر زبان چھیہ ژکہِ بٹہ ریتہ رسمن ہنز زبان تہ اگر کانسہِ شخژن یہ زبان تہ امیک لفظہ بھنڈار امہ خدشہ ووتوو زِ یہ گوژھ نہ راوُن، سہ پزِ نہ مارن۔ اگر نہ سنسکرت تہ ہندی آمیز کاشرس قبولیت دمو بٹہ کتھہ پاٹھۍ مازن کاشرس۔

امین کامل چھہ بہمس شمارس منز اقبال فہیمس، سنتوشس، اختر محی الدینس تہ شفیع شوقس "کلامس دزیوم معافی” مضمونس منز خبر ہیوان۔ کامل چھہ سنتوش نہِ سفارشہ یہ ؤنتھ رد کران زِ اسہِ گژھہِ سنسکرت تہ فارسی دۅشونی لفظہ بھنڈارن پیٹھ ناز آسن۔ یتھہ پاٹھۍ اسہِ سنسکرت لفظہ بھنڈار پنن کاشر باسان چھہ ، فارسی لفظہ بھنڈار تہِ گژھہِ پنن کاشر باسن۔ کامل سند مدعا اوس نوین سماجی تہ تہذیبی حالاتن پیش نظر منساونہ آمتۍ لفظ چھہ نہ دوبارہ زندہ کرنہ یوان۔ کشیرِ ہندۍ مسلمان بننا دوبارہ پنڈت زِ تم کرن سنسکرت کاشر بولن تہ لیکھن شروع۔

تروٲہمس شمارس منز چھپییہ رتن لال شانت سنز اکھ چٹھۍ یتھ منز تمۍ کامل سندس اتھ تبصرس پیٹھ اعتراض کورمت اوس یہ ؤنتھ زِ کاملس چھہ یہ بہت زِ سنسکرت بنیاد رژھرنۍ گٔے بٔٹل رژھرنۍ تہ فارسی مسلمانی۔ شانتن کور کامل سندس نیتس پیٹھ شک۔ یمہ کنۍ کاملس جوابا چھہ عرض کتابہِ منز اتھ معاملس پیٹھ اکھ مفصل مضمون لیکھن پیوو۔ غرض یہ زِ واد رسالس سیتۍ رود گۅڈنکہِ شمارہ پیٹھے اکہ نتہ بییہ رنگۍ بٹہ مسلمان بحث جاری۔ کیاہ ٲس پتاہ زِ عنقریب ییہ سہ دوہ ییلہ کشیرِ ہندس تواریخس امہ رنگۍ اکھ بوڈ ولگتن لگہِ۔!

کاشر رسالہ واد (قسط 2 )” پر 2 تبصرے

  1. آ ، جناب یہ روزِ جاری، ونہِ چھیہ شاعری، پیٹھ، افسانن پیٹھ، تنقیدس پیٹھ کتھ کرنۍ۔ میہ دوپ واد رسالہ کین شمولیاتن ہنز اکھ زان تھاوو انٹرنیٹس پیٹھ موجود۔ امہ سیتۍ چھہ پرن والین تمہ دورچین دلچسپی ین تہ کارکردگی ین ہند اندازہ گژھان۔

    پسند کریں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s