وقتچ ضرورت: نسخ خط


اسہِ پزِ  کاشرِ خاطرہ نستعلیق ترٲوتھ وۅنۍ نسخ خط ورتاون۔

نستعلیق یمو ایجاد کریوو تمو تہِ کور یہ سیٹھا سلہِ پننہِ عمومی لیکھہ پرِ منز ترک۔ یہ چھہ ایرانس منز  وۅنۍ صرف فن خوش خطاطی (آرٹ) خاطرہ استعمال کرنہ یوان، لیکھنس پرنس خاطرہ چھہ صرف نسخ۔

ایرانس منز چھہ نستعلیق صرف کینژن کتابن ہندین سرورقن، تنظیمن تہ ادارن ہندین سائین بورڈن ہندِ خاطرہ۔ امہ علاوہ شاذونادر گرانقدر کتابن مثلا دیوان حاقظ کین مخصوص ایڈیشنن ہندِ خاطرہ۔ بس! نستعلیق چھہ نہ عام استعمالس منز بالکل ورتاونہ یوان۔ ایرانس منز گژھہِ نہ توہہ نستعلیق کنہ اخبارس، میگزینس، کنہ عام ورتاوچہ کتابہ منز نظرِ۔ حتی کہ ایرانین ہند خط (handwriting) تہ چھہ نسخ۔

میہ چھیہ پتاہ یس چیز وانسہ ورتوومت آسہ تمہ کہ راونکھ دۅکھ چھہ گژھان۔ انسان دپان کہنی گوژھ نہ راون۔ سورے گوژھ ییتی روزن مگر وقتس برونہہ کنہ چھہ ساری مجبور۔ نستعلیق گژھہ نہ یکدم ختم، وارہ وارہ۔ گۅڈہ نیرن میہ ہوۍ "سرپھرے” یم نسخس منز کتابہ چھپاون۔ لوکھ تلن شور۔ اڈۍ دپن سٲنس کلچرس خلاف چھیہ سٲزش، اڈۍ دپن اسلام خطرے میں ہے، بٹہ بٲے ونن وچھ سا موکلووکھ نستعلیق تہِ۔ اونکھ عربی خط۔ بیترِ بیترِ۔

qashaq
حقیقت چھیہ یہ زِ کمپیوٹر تہ انٹرنیٹ کہ خاطرہ چھہ نسخ خط زیادہ موافق۔ یہ خط چھہ سیود، اکۍ سے سطرِ منز پکن وول، ورتاوہ کنۍ آسان، کفایتی تہ عالمگیر۔  اتھ منز چھہ ٹایپو گرافی ہند زبردست تنوع دستیاب تہ ممکن۔

خطاطی ہند زمانہ موکلیوو تہ تتھۍ سیتۍ مۅکلیوو  نستعلیق خط تہِ۔ وۅنۍ چھہِ اتھ اردو والۍ نتہ کاشرۍ لٲرۍ۔ بہ چھس یمہ کتھہِ ہند قایل زِ تبدیلی چھیہ ترقی ہنز ہیر۔

گنتی ہندۍ کینہہ کاتب ترٲوتھ، ٲسۍ نہ کشیرِ منز نستعلیقکۍ خوش خط کاتب تہِ دستیاب۔ پیٹھہ ییلہ کاشرس املاہس کُن یمو امہِ خطچ خوبصورتی چھیہ اعرابو یہ دپۍزِ تہِ زٔلتھ نمژ۔ نستعلیقس منز چھہ ان پیجس منز تھیکنۍ لایق زہ خط مگر ان پیج چھہ بند تلاو۔ عازم صٲبن بنوو محدودے سہی گلمرگ ناو کٔرتھ اکھ اوپن سورس نستعلیق خط ترمیم کٔرتھ کاسرش لایق یس میہ نیب کین پتمین ترین شمارن منز ورتوو۔ مگر اتۍ نے چھہ نہ بند گژھن۔ تتھ وتہِ پکنہ سیتۍ کیا نیرِ یۅس بتھہِ بند آسہِ۔

1950 دوران ییلہ سانۍ بزرگ نیتھہ ننہ زبانۍ اچھرہ ورُن کرنہِ لگۍ، اکھ تجویز ٲس نسخ۔ تجویز کرن والین ہنز دور اندیشی! مگر تمچ سپز تمہ ساتہ مخالفت۔ ونۍ کین چھہِ اسۍ مجبوری کنۍ فیس بکس پیٹھ نسخ حطے ورتاوان۔ میہ ووت 27 شمارہ پیٹھہ نیبس منز گۅڈنکۍ شیہ ستھ صفحہ نسخس منز دوان۔ اڈیو کٔر شکایت، اڈیو کٔر ژھوپہ۔ شمارہ 31 آسہِ اکھ قدم برونہہ۔ وچھو کیا روزِ ردعمل!

نوٹ: یمن دوستن نستعلیق تہ نسخ خطن ہنز فرق معلوم چھیہ نہ،  تہندِ خاطرہ چھہ عرض زِ یہ بلاگ چھہ نسخ خطس منز۔  ممکن چھہ پرنس ما آسہِ دقت یوان مگر صرف امہ مۅکھہ زِ تۅہہ چھہ نستعلیقس عادت۔ یہ بلاگ روزِو پران۔ تہند سوچ تہِ روزِ بدلان!

2 خیالات “وقتچ ضرورت: نسخ خط” پہ

Ali shaida کو جواب دیں جواب منسوخ کریں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s