تۅہہ نش ما کٲنسہِ جواب؟


"بٲتن الگ الگ تاریخ آسن چھہ نہ ضروری تکیازِ شاعری چھیہ نہ تاریخواری مطابق
مۅلۅن سپدان۔ وۅنۍ گوو فروعی معاملہ ؤنراونس چھہِ کم کاسہِ مدد کران۔”
— امین کامل، سرنامہ ‘یم میانۍ سۅخن’

"شاعری چھیہ دورن منز لیکھنہ یوان، دۅہن تہ ؤرین منز نہ۔ مگر یہ تہِ گژھہِ
یاد تھاوُن زِ داہ ؤری تہِ ہیکہِ اکھ دور ٲستھ، خاص کر تیزی سان
بدلونس وقتس منز۔”
— منیب الرحمن

شفیع شوقن لیوکھ کاشرِ ادبک تواریخ یُس اکھ بوڈ کارنامہ چھہ۔ میہ چھہ امیک گۅڈنیک ایڈیشن وچھمت یتھ منز واریاہ خٲمیہ آسہ۔ تنہ پیٹھہ آے اتھ زہ تریہ ایڈیشن تہ میہ چھیہ وۅمید گۅڈنکہ ایڈیشن چہ ساریۍ حٲمیہ آسن درو سپزمژہ تکیازِ شوقس ٲس پانہ تمن خٲمین پیٹھ نظر۔  امہ تواریخ علاوہ چھیہ ضرورت زِ کاشرِ ادبہ کس جدید دورس پیٹھ، یُس 1960 پیٹھہ 1980 تام جاری رود، ییہ تواریخی کٲم کرنہ۔ یہ کٲم گوژھ یونیورسٹی ہند کانہہ طالب علم انجام دین۔ یہ ہیکہِ پی ایچ ڈی یک تہِ موضوع بٔنتھ۔ 

کمۍ کیا لیوکھ تہ کر لیوکھ، پتھ کُن لیکھۍ متین چیزن کر تہ کٲژا تبدیلی آیہ کرنہ یمن کتھن پیٹھ گوژھ تحقیق سپدن۔ ادبچ روایت چھیہ نہ ٹی ایس ایلیٹ، جیرالڈ مینلی ہاپکنز سنزہ کتھہ چکاونہ سیتۍ قایم گژھان، نہ چھیہ سۅ خالص کتابہ چھپاونہ سیتۍ قایم گژھان یوت تام نہ اتھ تمام کارکردگی اندۍ اندۍ اکھ ادبی کلچر کھڑا گژھہ،ِ یوت تام نہ یمن چیزن پیٹھ کتھ گژھہِ۔ کتھ چھہ نہ مطلب صرف تجزیہ تہ تنقیدی مضمون بلکہ لیکھن والین، تہنزِ زندگی، تہنزن کتابن، تہندس کلامس متعلق  پریتھ کونہ کتھ سپدِِ۔

سانین بزرگ ادیبن چھہِ ہمیشہ پننین چیزن غلط سنہ تلہ کنہِ دینک عادت اوسمت۔ کلیات مہجورس منز چھہ واریاہن چیز ن غلط سنہ دِتھ، دینا ناتھ نادم سنزِ کتابہِ منز چھہ واریاہن چیزن ٲنی مٲنی سنہ دِتھ۔ تس چھہ نہ یہِ تہ یاد روزان زِ امہ برونہہ ہے میہ اتھۍ چیزس اکھ سنہ دیت، از کتھہ پاٹھۍ دمس بیاکھ سنہ۔ رحمن راہی یس اوس عادت یہ زِ سہ یُس تہ چیز کنہِ رسالس سوزان اوس تتھ اوس شیہ ؤری، داہ ؤری پرون سنہ تلہ کنہِ دتھ تھاوان۔ زن اوس سہ پنن کلام دہن ؤرین پتھ تھٲوتھ پرانہِ شرابکۍ پاٹھۍ مارکس منز کڈان۔ یہ اوس سہ اکھ سوچتھ سمجتھ  گپلہ کران۔ امین کامل، مظفر عازم ہوین شاعرن اوس نہ یہ مسلے تکیازِ یم ٲسۍ سیتی کتابہ چھپاوان۔ کاملن چھپاوِ 1972 تام ژور شعرہ سۅمبرنہ، مظفر عازمن تہ چھپاوِ 1974 تام زہ سۅمبرنہ، مگر باقی شاعر رودۍ کلامہ پتھ کن تھاوان۔ وجہ اوس صاف یتھ پیٹھ بییہ کنہِ ساعتہ کتھ گژھہِ۔

نادم، فراق تہ راہی رودۍ گوش دوان حالانکہ کلچرل اکاڈمی ٲس یہند کلام چھپاونہ خاطرہ ہمیشہ تیار۔ ٲخرس پیٹھ نیہ یمو کنی کتابا چھپٲوتھ، یمن منز چیزن سنہ سیتۍ سیتۍ لیکھکھ چھہِ،  یم اکثر غلط چھہِ۔ یہند یہ وطیرہ وچھتھ ژٔٹ کاملن سلی کتھ۔ تمۍ چھپٲو نہ 1972 پتہ کانہہ کتاب بلکہ سپد سہ 1980 پتہ کاشرِ ادبی ماحول تہ کشیرِ ہندِ ماحولہ نش یوت بدظۅن زِ تمۍ کور شاعری ہند کارخانے بند۔ صرف لیچھن تم خاص نظمہ مثلا تٲے نامہ، حمد تہ لڈی شاہ بیترِ یمن منز تمۍ دراصل اتھ صورت حالس پیٹھ افسوس ظاہر کورمت چھہ۔ اکہ قسمکۍ مرثی۔ ییلہ کامل  2001 منز امریکہ کس چکرس پیٹھ آو اتی نیو میہ تسند سورے کلام تہ کورم جمع کتابہ ہندس صورتس منز۔ نیب رسالہ منزہ تہِ کوڈم قصیدہ تہ باقی نظمہ یم 1972 برونہہ چھپیمتۍ ٲسۍ مگر کاملس اوس نہ کنہِ کتابہ منز شامل کرنک موقعہ میولمت۔ امۍ سنزِ عدم دلچسپی کنۍ لگۍ اتھ کتابہ چھپاونس پانژھ شیہ ؤری۔ تہِ ٲس نہ تس وۅنۍ یہ کلام چھپاونس منز دلچسپی۔

rah

کامل چھہ کاشر ادب رسالس 1967 منز پنن تازہ غزل بحثہ خاطرہ سوزان:

بہار پوک نہ اگر چانہِ ترایہ گرایہ میہ کیا
گلالہ داغ جگر ہیتھ چھہ جایہ جایہ میہ کیا

راہی تہِ چھہ غزل سوزان تہ اتھ تلہ کنہِ لیکھان 1958۔ دہہِ وہرۍ پرون یہ غزل چھپاونک کیا مقصد چھہ اوسمت؟ دہن ؤرین اوس نا امۍ کانہہ نوو غزل وونمت؟ کنہِ یہ اوس تیتھ زبردست غزل یس نہ اگر چھپہِ ہے تہ نقصان گژھہِ ہے۔ وچھو غزل کیا اوس یُس دہہ وہرۍ چھپاون ضروری اوس:

بلۍ تہِ نو آو یہ رنگ حسن خیالس یارو
داغ تھاواں ہا وچھم سونت گلالس یارو

اگر یہ غزل پزۍ پاٹھۍ 1958 ہک اوس۔ راہی سند یہ 1967 منز چھپاوُن چھیہ مندچھ۔ 1967 منز اوس کاشرس منز تہِ دۅہ کتہِ کور ووتمت۔

کامل چھہ سوزان اتھۍ رسالس 1976 منز پننۍ زہ غزل:

سمے صدا چھہ ژہاں سنگرن جگر کس پتھ
گگن ہوا چھہ تلاں تارکن مژر کس پتھ

تہ

لکھ چھہِ پھیراں عجیب باوتھ ہیتھ
معنہ روستے حسیں عبارتھ ہیتھ

راہی تہ چھہ پننۍ نطم "آورن” سوزان ، تلہ کنہِ چھس تاریخ لیکھان 1970۔ شیہ وری پتھ۔
راہی یس کیازِ پننین چیزن تلہ کنہِ تاریخ لیکھنک ضرورت پیوان؟ دویم کتھ سہ کیازِ ہمیشہ شیہ ؤری، داہ ؤری پرون کلام چھپاونہ خاطرہ سوزان؟

یم چھیہ سوچنس لایق کتھہ۔ تۅہہ نش ما کٲنسہِ جواب؟

تۅہہ نش ما کٲنسہِ جواب؟” پر 2 تبصرے

  1. کاشرس منز اوس اکھ وبا پھا لیومت۔ کانہہ اوس لیکھان کنہ بحرس غزل تہ سیتی اوس دعوا کران زہ یہ بحر اون مے کاشرس منز۔ مے لیوکھ 1975 س منز اکھ غزل۔ (بہ چھس کنے تہ وسکھنا مے نش خدایہ نیصف رآژ) بہ اوسس امہ وزہ یونورسٹی منز ایم اے کران۔ راہین بوز یہ غزل واریاہو بوز یہ غزل۔ یہ غزل گئے سیٹھا مقبول۔ مے تہ کور دعوا زہ ہتہ سا ببا یہ بحر اونوہ مے گوڈنچہ لٹہ کاشرس منز۔ کینژہ وہری چھپے یہ راہی صابنی غزل اتھی بحرس منز۔ ( زہر زہر آخر)( شہر آخر) غزل پری تھے چھہ باسان زہ غزل چھے آمژ سیٹھا محنت (labour) کرتھھ لیکھنہ۔ غزل آیہ میانہ غزلہ پتہ دویہ ترے یہ وہری لکھنہ مگر تاریخ تروونس 1975 یعنے سے سنہ یتھ منز لیچھمژ آس۔ ووں ون تہ پانے اتھ کیا کرو۔

    پسند کریں

    1. میہ چھہ راہی سندین ہمعصرن نش بوزمت ِ یہ اوس پینتی متاثر گژھان۔ کالہ اوس کانہہ چیز بوزان تہ دویمہ دۅہہ اوس تتھۍ پیٹھ پنن چیز ہیتھ یوان تہ بوزناوان۔ پتہ ییلہ چھپاوان اوس تاریخ اوسس واریاہ ؤری پرون تھاوان!
      چانۍ مقبول غزل بوزتھ ٲسۍ واریاہ شاعر یا تہ ہوبہو نتہ قانیہ ردیف ڈالتھ غزل ونان۔ "میہ وونمس نہ کہنی” بوزتھ تہِ لیکھۍ واریاہو پننۍ غزل۔ شفیع شوقن تہ لیوکھ اتھۍ وچھتھ غزل:
      موسم ڈلتھ تہِ کل چھیہ خیالس بہ کیا ونس
      خوشبو لبُن یژھاں چھہ گلابس بہ کیا ونس
      راہی صابن اوس چون غزل بوزمتے، پتہ بوزن شوق سند غزل تہ لیوکھن نقل در نقل:
      پکھن ٹاسا کٔڈتھ درایو بہ کیا ونہس
      اگر زانہہ کالۍ باز آیو بہ کیا ونہس

      مسلہ چھہ نہ کیازِ لیوکھکھ، مسلہ چھہ سانۍ ادیب کیازِ پننین چیزن تلہ کنہِ سنہ لیکھتھ تھاوان، یس اکثر غلط آسان چھہ۔

      پسند کریں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s