ترنگرِ والین ہنز کاکۍ گی کِنہ لکہ شعریات؟


رینزس گیندم، رینزس گیندم
ببن اونم بازراے
شیشہ دارے پانے لویم
رم گیہ شیشس ہتے ہاے
بب ہے دپیم یہ کیا کورتھ
بہ ژھۅپہ ژھۅپے پھرس چاے

رحمن راہی چھہ "کاشرِ لکہ شاعری ہند تخلیقی کردار”  (مطبوعہ شیرازہ 6:29) مضمونس منز اتھ لکہ بٲتس تشریح کٔرتھ خبر کمن پیٹھ بیہ موقعہ یتھہ پاٹھۍ پننۍ ژکھ کڈان:

"کینہہ ترنگرِ والۍچھہِ یتھین نوزک لوہ پھیرین تہِ پٲترِس کھٲرتھ تولنچ کاکۍگی کران تہ گہے سکہ بند قافیہ بندی ہنز تہ گہے تارژہ تولچ کتھ تلان۔ اما تمن چھنا قدیم یونانین ہند یہ دوپ تہِ کنن گومت زِ وزن یا قافیہ چھہ نہ شاعری ہنزِ ٲڈرنہِ منز شامل۔ تہ مرزا غالبن یہ اعلان تہِ چھکھنا بوزمت زِ
 فریاد کی کویی لے نہیں ہے
نالہ پابند نے نہیں ہے۔”

اتھ جذباتی بیانس منز چھہ راہی قافیس تہ وزنس متعلق پننۍ نفرت ظاہر کران۔ افسوس چھہ یہ زِ امہِ لکہ بٲتہ چہ تشریح  منز چھہ سہ یوت آورنہ آمت زِ سہ  چھہ نہ اصل بٲتہ کس فارمس پیٹھ توجہ کٔرتھ ہیوکمت، نتہ زن گوژھ نہ سہ امہِ بٲتہ کہ حوالہ قافیہ تہ وزنہ کہ غیر ضروری آسنچ کتھ تُلن تکیازِ یوت تام قافیہ بندی ہند سوال چھہ، یہ بٲتھ چھہ ٹاکارہ پاٹھۍ پانہ ہیرہ پیٹھہ بۅن تام قافین منز غرق۔گۅڈنچی نظرِ چھہ امہ کس دویمس دویمس مصرعس منز غزلہ کی پاٹھۍ قافیہ ورتاونہ آمت: بازراے/ہاے/چاے (باقی وچھو برونہہ کن)۔ یوت تام وزنک سوال چھہ، اتھ منز چھہ ہیجلۍ (کاشر) وزن تہِ برابر پاٹھۍ ورتاونہ آمت۔ یعنی یمن دۅن چیزن راہی معترض چھہ تم دۅشوے چیز چھہِ امہِ بٲتہ چہ ٲڈرنہِ منز شامل۔

 

وزنچ ٲڈرن

1

2

3

4

5

6

7

8

رین

زن

گین

دم

رین

زس

گین

دم

ب

بن

او

نم

با

زہ

راے

 

شی

شہ

دا

رے

پا

نے

لو

یم

رم

گے

شی

شس

ہ

تے

ہاے

 

بب

ہے

د

پیم

یہ

کیا

کر

رت

بہ

ژھۅپ

ژھو

پے

پھِ

رس

چاے

 

یہ چھہ بنیادی طور ہیجلۍ وزن تہ اکثر بٲتن ہندۍ پاٹھۍ چھہِ اتھ منز گۅڈنکس گۅڈنکس مصرعس منز ٲٹھ (8) تہ دویمس دویمس مصرعس منز ستھ (7) ہیجلۍ۔ اکثر ہیجلۍ وزنن منز چھہ ہیجلین ہند تعداد اہم، تمن ہنز ترتیب نہ۔ ترتیب چھیہ تمن وزنن منز اہم یمن منز ژھۅٹین تہ زیٹھین ہیجلین ہنز فرق اہم چھیہ۔ کاشرس ہیجلۍ عروضس منز چھہِ ژھوٹۍ تہ زیٹھۍ ہیجلۍ اکوے قیمت تھاوان۔ زبر، زیر، پیش یا بییہ کانہہ اعراب وول اوک اچھری لفظ یا لفظک ٹکرہ مثلا /ب/چھہ اکھ ہیجل، زہ اچھرہ والۍ ٹکرہ یا لفظ مثلا/زس/ تہِ چھہ اکوے ہیجل، تریہ اچھری ٹکرہ یا لفظ مثلا /راے/تہِ چھہ اکوے ہیجل، تہ ژور اچھری ٹکرہ یا لفظ مثلا /ژھۅپ/ تہِ چھہ اکوے ہیجل۔ یمن سارنی ہیجلین چھہ کاشرس ہیجلۍ عروضس منز کُنے مۅل۔ فارسی عروضس منز چھہ یمن الگ الگ مۅل مقرر تکیازِ تتہِ چھیہ ژھۅٹین تہ زیٹھین ہیجلین ہنز ترتیب اہم۔

سانۍ شاعری چھیہ دنیا چہ زیادہ تر شاعری ہندۍ پاٹھۍ فارمچ شاعری لہذا چھہِ اتھ منز فارمہِ سیتۍ تعلق تھاون والۍ عنصر موجود یمن منز قافیہ تہ ردیف تہ وزن تہ مصرعہ تہ شعر تہ ووج تہ بند تہ صنف چھہِ۔ یمہِ ساتہ اسۍ یمن بٲتن پیٹھ قلم تُلو اسۍ کرو ضرور تمن عنصرن ہنز کتھ یمو مطابق یم وننہ آمتۍ چھہِ۔ تتھ منز چھہ نہ کانہہ گۅناہ! سۅ چھیہ سانۍ شعری روایت یۅس سانہِ تمام لکہ شاعری احاطہ کٔرتھ چھیہ۔

دویم کتھ چھیہ یہ زِ دنیاہ کہ کُنہِ تہ تمدنکۍ لکہ بٲتھ چھہ قافیہ تہ وزن ورتاوان چاہے سہ وزن کُنہِ تہ نظامس تحت آسہِ یا خالص متوازیتس parallelismپیٹھ دٔرتھ آسہِ۔ یہ چھیہ پاپیولر شعریات، اتھ کیا کرِ کلاسیکل یونانۍ تنقیدی اصول زِ شاعری خاطرہ چھہ نہ وزن تہ قافیہ ضروری۔ تم ٲسۍ شاعری بدلہ تمہ وقتہ منظوم ڈراما لیکھان یمہ کس سیاقس منز تمو یہ کتھ کرمژ چھیہ۔ شیکسیپر تہ چھہ ڈراما لیکھان مگر یتتہ نس تاثر ہرراون چھس آسان قافیہ تہِ چھہ ورتاوان۔

 

بے بنیاد شہادت

راہی چھہ اتھ بیانس منز طنزک لہجہ رٔٹتھ مزید ونان زِ کینژن "ترنگرِ والین” (خبر یہ کمن کُن چھہ اشارہ؟) چھیہ نہ خبر زِ قدیم یونانیو چھہِ نہ قافیہ تہ وزن شاعری ہنزِ ٲڈرنہِ منز شامل کرۍ متۍ۔ راہی یس چھہ نہ شاید یہ معلوم زِ وزن تہ قافیہ چھہِ نہ براہ راست شاعری بلکہ شعری فارمن یا روایژن ہندۍ لوازمات۔ اگر یونانین ہند یہ خیال چھہ زِ شاعری ہندِ خاطرہ چھہِ نہ وزن تہ قافیہ ضروری تمیک مطلب گوو نہ یہ زِ سۅ شاعری کیا چھیہ نہ شاعری یتھ منز وزن تہ قافیہ ورتاونہ آمتۍ چھہِ یا وزن تہ قافیہ ورتاون یا تمن ہنز کتھ کرُن کیا چھہ گناہ۔  بییہ چھہ نہ یہ ضروری زِ یونانین ہند دوپ کیا ییہ اچھ ؤٹتھ ماننہ تکیازِ یہ چھہ نہ کانہہ خدایی بیان۔ کلاسیکل یونانین پتہ چھہِ دنیاہچہ تقریبا تمام تر شاعری (یونانۍ ہیتھ) وزن تہ قافیہ ورتاومتۍ۔ اگر  کلاسیکل یونانین ہندس دٔپس منز مطلق حقیقت آسہِ ہے، دنیا ہس منز آسہ ہے نہ بجن بجن زبانن ہندیو شاعرو وزن تہ قافیہ ورتاوۍ متۍ۔ غزل یا بییہ کانہہ روایتی فارم، سون وژن تہ لکہ بٲتھ چھہِ قافیہ تہِ ورتاوان تہ وزن تہِ تکیازِ یم زہ چیز چھہِ باقی عناصرن سیتۍ رٔلتھ یمن فارمن ہنز تشکیل کران۔

راہی چھہ غالبن شعر دتھ یہ رعب تراونچ کوشش کران زِ غالب ہوۍ بڈۍ شاعرن تہِ چھہ اعلان کورمت زِ وزن تہ قافیہ چھہِ نہ شاعری ہندِ خاطرہ ضروری۔ حالانکہ غالب سندس شعرس چھہ نہ وزن تہ قافیہ کس بحثس سیتۍ کانہہ تعلق۔ فریاد تہ نالہ یم دۅشوے چیز چھہِ ناہموار تہ بیہ ربط تہ بیہ ضبط۔ فن چھہ بندش، چستی تہ تہذیب منگان ۔بقول اقبال:

تا تو بیدار شدی نالہ کشیدم ورنہ
عشق کاریست کہ بے آہ و فغاں نیز کنند

راہی یتھ شاعرانہ زبان ورتٲوتھ نوزک لوہ پھیرۍ ونان چھہ، تم لوہ پھیرۍ چھہِ نہ فریاد تہ نالہ یا بیہ وزن  کریکہ نادک نتیجہ۔ یمن لوہ پھیرین ہنز تہذیب چھیہ قافیہ بندی تہ وزنکے نتیجہ۔ اگر یہ پوز مانو زِ امہِ شعرہ نش چھہ غالبن مراد قافیہ تہ وزن، غالبن آسہِ ہے نہ تیلہ پانہ قافیہ بند تہ وزنہ پابند شاعری کرمژ، یعنی پننۍ تمام شاعری عروض چہ لیہ تہ نیہ پابند کٔرمژ۔ سہ گوژھ تیلہ وزنہ روس کریکہ ناد تُلن۔ راہی ین تہِ چھیہ پانہ پننۍ سٲرے غزلیہ شاعری تہ نظمن ہند اکھ حصہ اوترہ تام  قافیہ تہ وزنچ پابند کرمژ ۔ یعنی اگر پزۍ پاٹھۍ قافیہ تہ وزن ضروری ٲسۍ نہ تسندین غزلن منز کیازِ چھیہ یمن ہنز مکمل پابندی؟ راہی کیازِ کنۍ کتھ، ونہ وُن، خۅدایا بیترِ نظمہ راتھ تام ونان یمن منز وزنچ تہ قافیچ پابندی تس کرنۍ پیوان چھیہ۔ یہ سبق کیا تہ کس کیت؟ اگر کانہہ شخص زیوِ کُنہِ پزرچ حمایت تہ پرچار کرِ تہ عملا باہوش و حواس پزر پانہ نظر انداز کرِ، یعنی لوکن ونہِ قافیہ تہ وزن مہ ورتٲوو تکیازِ یم چھہِ نہ شاعری ہنزِ مولہ ماہیژ منز شامل مگر بییہ اندہ روزِ پننین غزلن تہ نظمن منز دۅشونی ہند ورتاو کران، تس شخژس کیا ونو؟

راہی یمہِ ساتہ تہِ پابند یا فارمل شاعری ہنز کتھ کران چھہ مثلا پیٹھم لکہ بٲتھ سہ چھہ اکثر قافیہ تہ وزنچ پاسداری کرن والین ملامت کران۔ کیازِ؟

 

قافیچ ٲڈرن

راہی چھہ اتھ بٲتس تشریح کٔرتھ ہاوان زِ اتھ بٲتس منز کٲژا تخلیقیت چھیہ۔ مگر تشریح علاوہ ٲس تتھ چیزس تہِ سننچ ضرورت یتھ امہِ بٲتہ کس ہیتس سیتۍ تعلق چھہ یعنی قافیہ بندی۔ افسوس چھہ زِ راہی چھہ بٲتس پیٹھ نظر تراونہ ورٲے (خیالی) ترنگرِ والین پیٹھ پننۍ ژکھ کڈان۔ امیک وجہ چھہ یہ تہِ زِ سہ چھہ معنی یسے منز بند گومت بٲتہ کین لفظن چھہ نہ سنیومت۔ قافیہ چہ کارسازی ورٲے کتھہ پاٹھۍ ہیکہ کانہہ نقاد یا پرن وول اتھ بٲتس لطف تُلتھ؟ یہ کتھ گژھہِ یاد تھاونۍ زِ لکہ شاعری منز چھیہ قافیہ بندی سیٹھا اہمیت۔ تہۍ وچھو زِ یتھ بٲتس منز تہِ چھہ قافیہ نہ صرف اندن پیٹھ بلکہ جایہ جایہ میلان۔ یمن لکہ بٲتن منز چھہ آہنگ، روانی تہ یاد تھاونچ قابلیت قافیہ بندی ہندی بدولت۔ اگر یمن لکہ بٲتن منز قافیہ تہ وزن ورتاونہ آسہ ہن نہ آمتۍ یم آسہ ہنے نہ سٲنس یاداشتس منز محفوظ رودۍ متۍ تہ  اسہِ تام واتۍ متۍ۔ لکہ شاعری ہنز ٲڈرنہِ منز چھہِ یم زہ چیز سرس۔  وچھو اتھ بٲتس منز کتھہ پاٹھۍ چھیہ قافین ہنز طومار۔ 27 ہن لفظن ہندس اتھ بٲتس منز 15 قافیہ آسنۍچھہ نہ اتفاق (یا ترنگرِ والین ہنز کاکۍگی) بلکہ تتھ شعریاتس کن اشارہ یمچ کارفرمایی اتھ شاعری منز چھیہ۔ یونانۍ شعریات ہیکہِ نہ سانین لکہ بٲتن پیٹھ چسپان سپدتھ۔  ترٲوو قافین پیٹھ نظر:

قافیہ 1:   رینزس/شیشس/پھِرس
قافیہ 2:   گیندم/ اونم/ لویم/ رُم/ دپیم
قافیہ 3:   راے/ ہاے/ چاے
قافیہ 4:   پانے/ہتے/ ہے/ ژھۅپے

یمو قافیو علاوہ چھہ اتھ بٲتس منزکینژن لفظن ہند تکرار تہِ موجود۔
رینزس /رینزس
 گیندم/گیندم
 ببن/بب
شیشہ/شیشس
 ژھۅپہ/ژھۅپے

مزید چھہ بٲتس منز آوازن ہند ہشر تہ تکرار تہِ قابل غور۔ گۅڈنکین دۅن مصرعن منز نون تہ کھنکھۍنون شییہ (6) لٹہِ تہ پتمین دۅن مصرعن منز /پ/آواز ژورِ (4) لٹہِ۔ یمو دۅیو آوازو علاوہ چھیہ/ر/ آواز تہِ بٲتس منز ستہِ (7) لٹہِ آمژ۔ یمن آوازن ہندِ تکرارہ سیتۍ چھہ بٲتہ کس آہنگس تہ روانی منز اضافہ گومت۔ یم دۅشوے عنصر لکہ بٲتن ہندِ خاطرہ اہم چھہِ۔ اسۍ ہیکو نہ تتھ شاعری منز وزن تہ قافیہ نظرانداز کٔرتھ یۅس تمہِ شعریات موجوب وننہ آسہِ آمژ یتھ منز یم لازم چھہِ۔ اتھ شاعری اگر یمن عنصرن ہندِ مۅکھہ گزگتی تہِ لگاونہ ییہ ناجایز چھہ نہ کینہہ۔

یتھ مضمونس منز اوس یتے ہاون زِ وزن تہ قافیہ چھہ پیٹھمہ لکہ بٲتہ چہ ٲڈرنہِ منز شامل تہ یمو ورٲے امہ بٲتک تصور کرُن بلکہ امچ تحسین کرنۍ تہِ ناممکن چھیہ۔ 

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s