غزل کنہ وژن؟


mahjoor

نیب 21 منز تُل رفیق رازن مہجور سندِ اکہِ غزلہ کس وزنس متعلق سوال۔ غزل چھہ کلیاتس منز یتھہ پاٹھۍ درج:

للونۍ میہ چھم چانۍ لولہ چھۅکھ مۅکھ ہاوتو مارہ متیو
ینہ چانہِ ژلنم غم تہ دۅکھ رۅخ ہاوتو مارہ متیو
دل میون گۅڈہ برمرووتھن پتہ کیازِ داوس لوگتھن
دعدہ آدنکۍ لولکۍ سخن یاد پاوتو مارہ متیو
درایہ سازہ منزہ آوازِ ناز بوزتھ پتھر پییہ عشقہ باز
بے جان امہِ سازک یہ راز ننۍ راوتو مارہ متیو
چون رنگ و روپ چون خط و خال ڈیشتھ ژلاں غم تے ملال
ظلمکۍ تہ ستمن ہندۍ خیال مشراوتو مارہ متیو
ییلہ مس چھہِ چاوان عاشقس پر تہ پان ہوے باسان تس
ژہ تہِ پننہ اتھہ ستۍ لولہ مس میہ تہِ چاوتو مارہ متیو
دل میون لولہ نارس اندر یژ صاف گوو زٲلتھ کھۅچر
وۅنۍ لولہ بازارس اندر مۅلناوتو مارہ متیو
چھکھ زندگی بخشاں کمن یہ تہِ تازہ کرتن میون من
بے حیس گومت شونگمت چمن وزناوتو مارہ متیو
ییلہ عقلہِ کور لولس جواب ووتھ شور عالم گوو خراب
وزناوۍ متہِ فتنک یہ خواب بییہ ساوتو مارہ متیو
پوشہ نولہ سندین آلون گل پانہ گلۍ چھِکھ آلون
مہجور سنزہ کتھہ کیا لوَن پرکھاوتو مارہ متیو

راز چھہ ونان زِ مہجورن یتھ وزنس پیٹھ یہ غزل وونمت چھہ، یہ چھہ نہ تتھ پیٹھ پورہ وتران۔ ٲخرس پیٹھ چھہ راز امہِ غزلہ کس قافیس پیٹھ تہِ اعتراض کران ۔ ونان چھہ: "مطلع تل چھہ صاف ننان زِ غزلک قافیہ چھہ (رۅخ) (مۅکھ) بیترِ تہ ردیف (ہاوتو مارہ متیو) مقرر کرنہ آمت۔مگر امچ پابندی چھیہ نہ مطلع ورٲے کنہِ تہِ شعرس منز نباونہ آمژ۔”

بہ کرہ راز نین دۅشونی نکتن پیٹھ کتھ۔گۅڈہ تلون قافیچ کتھ۔

سانۍ وژن لیکھن والۍ شاعر ٲسۍ پننس کلامس غزلے ونان۔ امیک ثبوت چھہِ تم قلمی نسخہ یمن منز وژنن پیٹھ تہِ غزل عنوان چھہ دتھ۔ امہ علاوہ ٲسۍ سٲنۍ شاعر پانس غزل خوانے ونان۔ مثلا وچھوکھ یم شعر:

حاجنک اسد غزل خانے    صاحب دل نے ونانے
تمۍ پان زولے اتھ عشقہ نارس   سلورِ منز لارس تہ لولو
(اسد پرے)

رازہ ہونزے فیض ازالی چھہ تو  وازہ محمود کیا یہ غزل خانہ سون
(وازہ محمود)

باہوشن چھس باواں سیر   بے ہوشن دواں الماس تیر
وون احد زرگرن غزل رنگمار   کافر سپدتھ کورم اقرار
(احد زرگر)

احد زرگر زاگہِ شلس   لاگہِ غزل خان
باغ رضوانہ حورہ ولس   سے میہ دلس کان
(احد زرگر)

چیتہ محمود مستانے   برۍ برۍ پیالہ موے
ازلی چھکھ غزل خوانے مہ کر دیوانگی یے
(محمود گامی)

یم ساری مصرعہ چھہِ وژنن ہندۍ ۔

لل دیدِ ہند "واکھ تہ وژن” مصرعہ الگ ترٲوتھ چھہ یہ تحقیق کرنک ضرورت زِ وژنس وژن کرہ پیٹھہ تہ کتھہ پاٹھۍ گوو شروع۔ کلیات مہجورس منز چھہ صفحہ 207 پیٹھ اکس وژنس متعلق نوٹ زِ مہجورن چھہ تتھ پننہِ اتھہ تلہ کنہِ یتھہ پاٹھۍ تاریخ درج کورمت۔ ” 2 ہار 98 بکرمی کو غزل شروع ہوکر7 ہار 98 بکرمی کو ختم ہوئی۔” گویا مہجور تہِ چھہ پننین وژنن غزلے ونان اوسمت۔ ابن مہجور تہِ چھہ اتھۍ صفحس پیٹھ بییس نوٹس منز وژنس غزلے ونان۔ مہجور سند پیٹھم غزل تہِ چھہ فارمہِ کنۍ ژکہِ وژن۔ کلیات مہجورس منز چھیہ اتھ غزلہ کس صورتس منز کتابت کرناونہ آمژ، یمہِ کنۍ اتھ پیٹھ پرن والین غزلک دھوکہ لگان چھہ تہ رفیق رازن تہِ چھہ نہ امہِ کس فارمس کن زیادہ ظۅن دیتمت۔ بہ کرن یہ وژنہ چہ شکلہِ منز بۅنہ کنہِ پیش۔

للونۍ میہ چھم چانۍ لولہ چھۅکھ   مۅکھ ہاوتو مارہ متیو
ینہ چانہِ ژلنم غم تہ دۅکھ   رۅخ ہاوتو مارہ متیو

دل میون گۅڈہ برمرووتھن   پتہ کیازِ داوس لوگتھن
دعدہ آدنکۍ لولکۍ سخن   یاد پاوتو مارہ متیو

درایہ سازہ منزہ آوازِ ناز   بوزتھ پتھر پییہ عشقہ باز
بے جان امہِ سازک یہ راز   ننۍ راوتو مارہ متیو

چون رنگ و روپ چون خط و خال   ڈیشتھ ژلاں غم تے ملال
ظلمکۍ تہ ستمن ہندۍ خیال   مشراوتو مارہ متیو

ییلہ مس چھہِ چاوان عاشقس   پر تہ پان ہوے باسان تس
ژہ تہِ پننہ اتھہ ستۍ لولہ مس   میہ تہِ چاوتو مارہ متیو

دل میون لولہ نارس اندر   یژ صاف گوو زٲلتھ کھۅچر
وۅنۍ لولہ بازارس اندر   مۅلناوتو مارہ متیو

چھکھ زندگی بخشاں کمن   یہ تہِ تازہ کرتن میون من
بے حیس گومت شونگمت چمن   وزناوتو مارہ متیو

ییلہ عقلہِ کور لولس جواب   ووتھ شور عالم گوو خراب
وزناوۍ متہِ فتنک یہ خواب   بییہ ساوتو مارہ متیو

پوشہ نولہ سندین آلون   گل پانہ گلۍ چھِکھ آلون
مہجور سنزہ کتھہ کیا لوَن   پرکھاوتو مارہ متیو

امچ وژنہ ہیت درایہ وۅنۍ صاف ننۍ ۔ پریتھ بندس منز چھہِ تریہ ہم قافیہ مصرعہ یس زن وژنہ کہ اکہ ہیتک معمول چھہ۔ ژورم مصرعہ چھہ ووج۔ عام طور چھہ وژنن منز ہیرہ بۅن ہوُے ووج آسان مگر
کینژن وژنن منز چھہِ حبہ خاتونہِ سندِ پیٹھے متنوع ووج تہِ میلان۔ مثلا یمن وژنن ہندۍ ووج:

وارۍ وین ستۍ وارہ چھس نو
ہنہِ لو ہنہِ لو ہنہِ لو
بو وِلہ ونے یارہ تے

زیر مطالعہ وژنہ چہ مخصوص فارمہِ منز چھہِ مہجورنۍ بییہِ تہِ کینہہ بٲتھ یمن منز بنم مشہور بٲتھ تہِ چھہ۔
ویسۍ یے سہ میون دلبر   شیریں کلام ییہ کر
یس کن وچھتھ ژلاں شر   سے گل اندام ییہ کر

ییہ نا سہ یار میونے   ژلہِ ہے میہ زونہِ گرونے
وندس قبیلہ کرونے   روزس غلام ییہ کر

یہ بٲتھ چھ وژنہ چہ چالہِ کلیات کس صفحہ 118 پیٹھ درج۔ وۅنۍ زن لیکھون یہ غزلہ چالہِ:
ویسۍ یے سہ میون دلبر شیریں کلام ییہ کر
یس کن وچھتھ ژلاں شر سے گل اندام ییہ کر
ییہ نا سہ یار میونے ژلہِ ہے میہ زونہِ گرونے
وندس قبیلہ کرونے روزس غلام ییہ کر

کانہہ وژن خالص غزلہ چالہِ لیکھنہ سیتۍ ما بنہِ سہ غزل؟ یتھے پاٹھۍ وچھون مہجور سند یہ مشہور بٲتھ تہِ کلیات کس صفجہ 127 پیٹھ۔
باغ نشاط کے گلو   ناز کران کران وۅلو
خندہ کراں کراں وۅلو   مختہ ہراں ہراں وۅلو

امی چالہِ چھہِ اسہِ نش محود گامی تہ رسول میرنۍ تہِ کٔژ وژن۔ یمن منز یم مشہور بٲتھ تہِ چھہِ:
کیا جان چھی شوبانے پرنور زہ دردانے
(محمود)
سوز دلک بہ کیا ونے روز دما بوز کنے
(محمود)
یارہ لوگتھ سنگ دل چانہ چھم جانک قسم
(رسول)
زلف زنجیر یارس ونس بو زار کوت گوم
(رسول)
جب آیا تو نے گھبرایا ہمار من الا جانو
(رسول)
یارہ رۅے ہاوتم برقہ تلی محرابے بمن لگیو
(رسول)

یمن منزتہِ چھہِ رسول میرنین ترین وژنن ہندۍ بند غزلکۍ پاٹھۍ شعر بنٲوتھ کتابت کرناونہ آمتۍ ۔ شاید آسن یم یتھے پاٹھۍ مسودن منز تہِ۔

جب آیا وژنہ کس مطلعس چھیہ سۅے بٲش یۅس مہجورنس سندس مطلعس چھیہ، یتھ پیٹھ رفیق رازن اعتراض چھہ کورمت۔
جب آیا تو نے گھبرایا ہمارا من الا جانو
دیا دل تو پراے ساتھ رلایی تن الا جانو

یہ مطلع وچھتھ تہِ چھہ باسان زِ اتھ منز آسہِ تن، من، بیترِ قافیہ تہ الا جانو ردیف۔ مگر ییلہِ اسۍ امہِ بٲتکۍ باقی شعر وچھان چھہِ اکھ چھہ یہ ننان زِ یہ چھہ نہ غزل بلکہ وژن تہ بییہ یہِ زِ تن، من چھہ نہ امیک قافیہ۔ حقیقت چھیہ یہ زِ غزلک فارم چھہ غزلس نزدیک (1) یمہ کنۍ سانین وژن شاعرن گڑبڑ اوس گژھان۔ تمن چھیہ نہ صنفی (ہیتی) امتیازن منز شاید تمہ رنگہ دلچسپی ٲسمژ یمہ رنگہ اسہِ چھیہ۔

ممکن چھہ یمن بٲتن منز ما آسہِ ہے یمو شاعرو شعوری یا غیر شعوری طور غزل وننک شروعات کورمت مگر وژن وننکۍ عادتن چھہِ مطلع پتہ باقی بٲتھ وژنہ چہ فارمہِ کن پھرۍ متۍ۔ کنہِ ساتہ چھہ یہ ونن مشکل گژھان زِ بٲتس ونوا وژُن کنہ غزل۔ مگر محض غزلکۍ پاٹھۍ وژنکۍ بند لیکھنہ ستۍ بنن نہ یم بٲتھ غزل۔ یتھے پاٹھۍ ہیکہِ نہ محض یہ کتھ کنہِ وژنس غزل بنٲوتھ زِ تتھ منز چھہ فارسی وزن ورتاونہ آمت۔ محمود گامی تہ رسول میرن چھہِ وژنہ ہا فارسی وزنن پیٹھ ونۍ متۍ۔

رفیق رازن قافیس پیٹھ اعتراض چھہ غزلہ کس حدس تام صحیح مگر چونکہ مہجورن زیر مطالعہ بٲتھ چھہ نہ غزل، لہذا چھہ یہ اعتراض پانے زایل گژھان۔کیا محمود گامی، کیا رسول میر، کیا عبدالاحد آزاد تہ کیا غلام احمد مہجور یم شاعر چھہِ ژکہِ وژن شاعر ٲسۍ متـۍ۔

رفیق رازُن بیاکھ سوال یس تمۍ امہِ کس وزنس متعلق تلمت چھہ۔ (تتھ پیٹھ کرو دوبارہ کتھ۔)

(1)
ہوئے مر کے ہم جو رسوا   ہوئے کیوں نہ غرق دریا
نہ کبھی جنازہ اٹھتا   نہ کہیں مزار ہوتا

جب وہ جمال دل فروز   صورت مہر نیم روز
آپ ہی ہو نظارہ سوز   پردے میں نہ چھپائے کیوں

یتھۍ ہوۍ غزل آسہ ہن سانین شاعرن وارہ کارہ وژن باسان۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s