کاشرِ گرامرک اکھ سبق


"میانہِ زندگی ہند مقصد سپد پورہ۔”

"میانہِ زندگیہِ ہند مقصد سپد پورہ۔”

سوال چھہ یہ زِ یمو دۅیو جملو منزہ کُس اکھ چھہ صحیح۔ اگر اسی رسالن تہ کتابن دونژھ دمو، اسہِ لگہِ یہ پتاہ زِ گۅڈنکس جملس منز یتھہ پاٹھۍ لفظ /زندگی/ ورتامنہ آمت چھہ، سہ چھہ زیادہ عام۔ تہ دۅیمہ جملک لفظ /زندگیہِ/ چھہ اتھ سیاقس منز شاید پتمٮن وُہن پٕنژہن ؤرین منز ورتاوُن شروع سپدمت تہ سہ تہِ خاص کر کینژنے ادیبن ہندین لیکھن منز۔سوال چھہ صحیح کیا چھہ؟

وارہ سٔنتھ وچھو اسۍ زِ زندگی لفظک یہ ورتاو چھہ املاہس سیتۍ تعلق تھاوان تہ گرامرس سیتۍ تہِ۔ گۅڈہ دمو اسۍ امہ کس گرامرس ووٚن۔ گرامر کٮن اصطلاحاتن منز کیا ونو اسۍ یمن جملن منز زندگی لفظہ کس استعمالس؟ کاشرس گرامرس منز چھہ اسمن (ناوتٮن) سیتۍ حالت اضافی (posessive) یتھہ پاٹھۍ ظاہر کرنہ یوان:

مذکر اسم/مذکر اسم:
چانہِ خیالک (مذکر) گاش (مذکر) —  (خیال+اُ+ک)

مذکر اسم/مونث اسم:
چانہِ خیالچ (مذکر) روشنی (مونث) —  (خیال+إ+چ)

مونث اسم/مذکر اسم:
میانہِ نظرِ (مونث) ہند گاش (مذکر) — ( نظر+اِ+ہند)

مونث اسم/مونث اسم:
میانہِ نظرِ (مونث) ہنز روشنی (مونث) — ( نظر+اِ+ہنز)

یمن جملن منز چھہِ /خیالک/، /خیالچ/، /نظرِ ہند/ تہ /نظرِ ہنز/ لفظ حالت اضافی علاوہ حالت فاعلی (oblique case) تہِ ظاہر کران۔ مونث اسمن پتہ کنہِ چھہ اتھ سیاقس منز /اِ/ جوڑنہ یوان۔ مثلا:
نظر>نظرِ ہند/ہنز؛ ناو>ناوِ ہند/ہنز؛  رگ>رگہِ ہند/ہنز؛  شکل>شکلہِ ہند/ہنز  مگر اسۍ کیازِ چھہِ نہ عام پاٹھۍ کینژن مخصوص طرزہ کٮن اسمن سیتۍ یہ /اِ/ جوڑان؟ تہ رحمن راہی، رتن لال شانت تہ شفیع شوق کیازِ یمن مخصوص لفظن تہِ پتہ کنہِ تہِ یہ /اِ/ جوڑان؟ یعنی تم کیازِ چھہِ لیکھان:

مستی ہند بدلہ مستیہ ہند
ہنرمندی ہند بدلہ ہنرمندیہ ہند
شاعری ہند بدلہ شاعرییہ ہند

خۅد اعتمادی ہند بدلہ خۅد اعتمادیہ ہند؟  یم سٲری چھہ تم اسم یم زیٹھس /ای/ مصوتس  (vowel)پیٹھ اند واتان چھہِ۔ یہ مصوتہ چھہ زیوٹھ تہ /اِ/ ژھۅٹہِ مصوتک جورہ۔ دۅشوے چھہِ ٲسہ کس برونہمس حصس منز اکی طریقہ بناونہ یوان، صرف یمہ فرقہِ سان زِ اکھ چھہ ژھوٚٹ تہ بیاکھ زیوٹھ۔

gorillasکاشرس منز چھہ یم لفظ فارسی (اردو) پیٹھہ آمتۍ۔ اسہ یُس قاعدہ حالت اضافی تہ حالت فاعلی ظاہر کرنہ خاطرہ اوس، اسہِ لگوو سہ یمن لفظن پیٹھ تہِ۔ مگر مسلہ اوس یہ زِ یمن لفظن پتہ کنہِ ٲس تمی مصوتچ زیٹھ شکل یُس اسۍ یمہ حالژ ظاہر کرنہ خاطرہ ورتاوان چھہِ۔ یعنی /زندگی/ لفظچ ٲخری آواز /ای/ چھیہ  /اِ/ مصوتچی زیٹھ شکل۔حقیقت چھیہ یہ زِ زندگیہ:  /زندگ (ای + اِ)/ لفظک پھور چھہ مشکل تکیاز‏ اتھ پتہ کنہِ یمہ آوازہ چھیہ تم چھیہ ٲسہ چہ اکی جایہ، اکی طریقہ کڈنہ یوان۔ اکھ آواز  کٔڈتھ، پتہ بیاکھ آواز تتھۍ جایہ، تمی طریقہ کڈنہ خاطرہ چھیہ ٲسچ حالت تمہ حالژ نش ڈٲلتھ دبارہ واپس اننچ ضرورت پیوان، لہذا چھیہ یہ پھورس مشکل بناوان۔ اصول چھہ یہ زِ یوٚت تام زبانۍ ہنزن آوازن ہند تعلق چھہ اکی یا ہشی آوازِ ہندِ تکرارہ بہ نسبت چھیہ اکہ آوازِ پتہ بیاکھ مختلف آواز کڈنۍ آسان۔

ییلہِ یہ سچویشن آسہِ، زبانۍ ہنزِ صوتیاتی عملہِ منز چھیہ کمی بیشی ہنزہ زہ صورژ ممکن سپدان۔ اکس صورژ منز چھیہ یم ہشیۍ آوازہ (ای تہ اِ) اکھ اکس نش ژھٮن دتھ الگ کڈنہ یوان، تہ دوٚیمہِ صورژ منز چھیہ یمو منزہ اکھ (زیادہ تر دوٚیم) آواز یکسر تراونہ (ختم) کرنہ یوان۔

اسۍ تلون گۅڈنچ صورت۔عام طور چھیہ اکھ بیاکھ آواز یۅس شدید طور مختلف آسہِ نہ، یمن دۅن آوازن منزس تھاونہ یوان۔ مثلا (زندگ+ای+اِ) ہنزن /ای/ تہ /اِ/ آوازن درمیان چھیہ اکھ نزدیکی آواز نیم مصوتہ /ی/ تھاونہ یوان۔ /ی/ نیم مصوتہ(semi-vowel)  گژھہِ نہ /ای/ مصوتس سیتۍ گڈ مڈ کرنہ یُن۔ /ای/ چھہ مصوتہ تہ /ی/ نیم مصوتہ یُس مصمتچ (consonant)کٲم دوان چھہ۔ بہرحال، یہ نیم مصوتہ یمن دۅن آوازن منزس تھاونہ سیتۍ چھیہ زندگی لفظچ اضافی تہ فاعلی حالت یہ بنان:

(زندگ+ای+ی+اِ>زندگی+یہِ)۔ اتھ صوتیاتی عملہِ منز چھہ /ای/ مصوتک زیچھر راوان تہ یہ چھہ /ای/ بدلہ /اِ/ مصوتس منز تبدیل گژھان تہ لفظچ ٲخری صوتیاتی شکل چھیہ (زندگ+ اِ+ی+اِ) بنان یعنی زندگِیہِ۔ لہذا چھہ نہ زندگیہ‏ لفظچ صحیح ژھٮن بندی (زندگی+اِ) بلکہ (زندگ+اِ+یہ)۔ یہ چھیہ سۅے شکل یتھ رحمن راہی، رتن لال شانت، شفیع شوق، بیترِ ورتاوان چھہِ۔

دوٚیم صورت چھیہ یہ زِ (زندگی+اِ) لفظہ کیو دۅیو متصل (ای تہ اِ) مصوتو منزہ چھہ ٲخری مصوتہ ترٲوتھ مسلہ ختم کرنہ یوان،تہ زندگی لفظچ اضافی تہ فاعلی حالت چھیہ کُنہِ کمی بیشی روٚس خۅد زندگی بنان۔ یہ چھیہ سۅ صورت یۅس عام طور املایی ورتاوس منز چھیہ، بلکہ عام بول چالس منز تہِ ورتاونہ یوان چھیہ۔

گرامر تہ صوتیاتی نقطہ نظرِ کنۍ چھیہ دۅشوے شکلہ ممکن، مگر وچھن چھہ یہ زِ ورتاوس   (usage) منز کیا چھہ؟ زبان چھیہ نہ متروکاتن ہنز تجدید۔ اگر کانہہ صوتی فارم مشراونہ یوان چھیہ تتھ چھہ کانہہ نتہ کانہہ وجہ آسان۔ /زندگیہِ ہند/ بدل /زندگی ہند/ ورتاو عام گژھنس تہِ چھہِ کینہہ وجہ یم یتھہ پاٹھۍ چھہِ۔

اکھ وجہ چھہ کاشرِ زبانۍ ہند سہ رجحان یمیک ذکر بہ بار بار کاشرِ عروض کہ تعلقہ کران چھس۔ کاشرس منز چھہ لفظن پتہ کنیک ژھوٚٹ مصوتہ تیوت ہلکہ زِ یہ چھہ یا تہ تشدیدِ نتہ تالریژ منز مۅژان۔ یعنی زندگیہِ (زندگی +اِ) لفظچ (اِ) آواز چھیہ تیژ سۅتان زِ یہ چھیہ تقریبا ختم گژھان۔ یہ آواز چھہِ اسۍ صرف پننس ذہنس منز تصوراتی طور بوزان۔ امیک چھہ صرف تصور۔ یہ چھہ اکھ وجہ زِ /زندگیہِ ہند/ بدلہ کیازِ میول /زندگی ہند/ ورتاوس قبول عام۔ بیاکھ وجہ چھہ کاشرِ زبانۍ ہندس ہیجلۍ ساختس سیتۍ تعلق تھاوان۔ کاشرِ زبانۍ ہندٮن لفظن ہنز غالب ہیجلۍ ساخت چھیہ اکھ ہیجل، زہ ہیجلۍ تہ تریہ ہیجلۍ۔ زندگی لفظچ ہیجلۍ تعداد چھیہ تریہ /زن۔د۔گی/ ییلہ زن زندگیہِ لفظچ ہیجلۍ تعداد چھیہ ژور /زن۔د۔گِ۔یہ/۔ لفظن منز ژور ہیجلۍ آسنۍ چھیہ نہ کاشرِ زبانۍ ہنز بنیادی خصوصیت۔ لہذا اگر باقی زبانو پیٹھہ لفظ أنتھ تمن صرفی عملہِ کنۍ ہیجلۍ تعداد ہرِ کاشر زبان چھیہ اگر ممکن آسہِ تم کم کرنہ چہ وتہ کڈان۔ چونکہ گرامر تہ صوتیاتی نقطہ نظرِ کنۍ چھیہ (زندگی ہند تہ زندگیہ ہند) دۅشوے شکلہ ممکن، سانہِ زبانۍ ہنزِ ہیجلۍ تعدادہ چہ ترجیح کنۍ سپز گۅڈنچ صورت عام۔ یعنی /زندگی ہند/ ترکیب چھیہ اسہِ زیادہ لسانی آسایش فراہم کران۔

کاشرس منز چھہِ ژور ہیجلۍ والۍ سیٹھا کم لفظ۔ یم چھہِ تم چھہِ دوٚیمیو زبانو پیٹھہ آمتۍ۔

مثلا    صوتیاتی /صو۔تِ۔یا۔تی/ یا خصوصیت /خ۔صو۔صِ۔ یت/

اسٚۍ چھہِ اکثر یتھٮن لفظن ترٮن ہیجلٮن منز موٚژراونچ کوشش کران۔ /صو۔تِ۔یا۔تی/ چھہ /صوت۔یا۔تی/ بنان تہ یتھے پاٹھۍ چھہ /خ۔صو۔صِ۔یت/ تہِ ترٮن ہیجلٮن منز موٚژان /خ۔صوص۔یت/۔

تہِ کٔرتھ چھہِ اسہِ یتھۍ ہوۍ لفظ ژۅن ہیجلٮن منز قبول کرۍ متۍتکیازِ یمن ہندس تلفظس منز چھہ نہ (ہشیۍ آوازہ متصل آسنہ کنۍ) پھورک سہ مخصوص صورت حال پیش یوان یُس مثلا زندگیہِ، شٹھگیہِ، فراوانیہِ لفظن منز یوان چھہ۔

ٲخرس پیٹھ کرہ بہ زندگی/زندگیہ؛ شاعری/شاعریہ ہوٮن لفظن ہندِ ورتاوک اکھ مختصر مطالعہ پیش۔ یہ مطالعہ چھہ انہار 2004 غزلک فن شمارس تام محدود۔ اتھ شمارس منز چھہِ 12 ہن ادیبن ہندۍ مضمون شامل تہ اہم کتھ چھیہ یہ زِ امچ کتابت چھیہ اکی کاتبن معراج ترکوی ین کرمژ۔ لہذا یمن لفظن ہنزن املایی شکلن ہنز تفاوت چھہ ہاوان ز یہ فرق چھیہ مقالہ نگارن ہنز۔

12 ہو ادیبو منزہ چھہِ صرف 2 ادیب پننٮن مقالن منز /شاعری ہند/ بدلہ /شاعرییہ ہند/ ہشہِ شکلہ ورتاوان۔ یمن ہندۍ ناو چھہِ رحمن راہی تہ شفیع شوق۔یمن دۅن ادیبن ہندٮن تحریرن منز یہ ہشر آسن چھہ نہ کانہہ تعجب تکیازِ یم چھہِ کاشرس ڈپارٹمنٹس منز یکجا رودۍ متۍ تہ یمو چھہ اکھ اکس پیٹھ سیٹھا اثر تروومت۔ تعجب چھہ زِ شفیع شوق سند برادر ناجی منور چھہ نہ یمن لفظن ہنزِ املایی تہ صرفی شکلہِ متعلق پننس بٲے سنز پیروی کران۔ سہ تہِ چھہ /زندگی ہند/ لیکھان۔ سوال چھہ یہ زِ یمن لفظن ہنزہ /زندگیہ ہند/ ہشہ شکلہ لیکھنہِ کمۍ چھیہ شروع کرِ مژہ؟ راہی ین کنہ شوقن؟ اتھ سوالس ہیکن تمے جواب دتھ، مگر انہار کہ امہ شمارہ تلہ چھیہ اکھ کتھ ننۍ نیران زِ ییتہ راہی پننٮن دۅن مقالن منز یکسان طور تسلسل سان /خود مستیہِ ہند/ ، /ہۅنرمندۍیہ ہند/ ہشہ شکلہ ورتاون چھہ، شوق چھہ پننٮن دۅشونی شامل مضمونن منز اتی یم لفظ اکہ طریقہ لیکھان تہ اتی بییہ طریقہ۔ تسندٮن لیکھن منز چھہ نہ یمن لفظن ہندس املاہس متعلق کانہہ ہشر۔ یمہ کنۍ شک چھہ گژھان زِ یم لفظ ما چھہِ راہی ین نے امہ طریقہ لیکھنۍ شروع کرۍ متۍ۔ مگر یپارۍ چھہ رتن لال شانت تہِ پننٮن لیکھن منز راہی سندۍ پاٹھۍ /زندگیہ ہند/، /خۅد مستیہِ/ ہشہِ شکلہ تسلسل سان لیکھان۔ بہرحال، یمن لفظن ہند یہ املا یمۍ تہِ شروع کوٚر، یہ چھہ محدود تہ میانہ یمہِ تجزیہ مطابق چھیہ /زندگی ہند/ صرفی شکل سانہِ خاطرہ زیادہ صوتی تہ املایی آسایش فراہم کران۔

اتھ املایی شکلہِ پتہ کنہِ چھہ گرامرک یہ اصول زِ تمن لفظن منز چھیہ نہ حالت اضافی تہ حالت فاعلی خاطرہ کانہہ تبدیلی یوان یم زیٹھس /ای/ مصوتس پیٹھ اند واتان چھہِ۔ انشا اللہ دبارہ کرہ بہ کاشرِ زبانۍ ہندس تتھ رجحانس پیٹھ کتھ یُس امہ زبانۍ ہند صوتیات تہ گرامر آسان تہ سادہ بناوان چھہ۔ یہ چھہ سانٮن اچھن برونہہ کنہِ سپدان۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s