وزنن ہنز پارۍ زان (3): تاکیدی وزن


م

تاکید چھہ کنہِ لفظس پیٹھ زور تراونہ خاطرہ ورتاونہ یوان۔مثلا: ‘راتھ ٲس سردی۔’

اتھ جملس منز چھہِ تریہ لفظ۔ اگر سون مراد یہ آسہِ زِ سردی چھیہ نہ از بلکہ ٲس راتھ، تیلہ تراوو اسۍ یہ جملہ ادا کرنہ وزِ ‘راتھ’ لفظس پیٹھ زور۔ اگر اسہِ یہ ونن آسہِ زِ اتھ منز چھہ نہ کانہہ شک زِ راتھ ٲس سردی، تیلہ تراوو اسۍ ‘ٲس’ لفظس پیٹھ زور۔ تہ اگر سردی ہنز شدت ہاونۍ مراد آسہِ، تیلہ تراوو اسۍ ‘سردی’ لفظس پیٹھ زور۔

جملہ کس کنہِ لفظس پیٹھ معنی کہ لحاظہ باقی لفظن مقابلہ زیادہ زور تراوُن چھہ واریاہن زبانن منز رایج۔ معنیس سیتۍ واٹھ آسنہ کنۍ ونو اسۍ اتھ معنوی تاکید۔ معنوی تاکید چھہ نہ وزنن ہنز بنیاد بنتھ ہیکان، تکیازِ امیک تعلق چھہ جملس سیتۍ تہ اکس جملس منز ہیکن نہ اکہ کھۅتہ زیادہ معنوی تاکیدہ ٲستھ۔ (راہی چھہ امی تاکیدچ مثال دتھ تاکیدی وزنک جواز پیش کران۔) البتہ کینژن زبانن منز چھہ جملہ کین اڈین لفظن پیٹھ زیادہ زور یا تاکید پیوان تہ اڈین کم یتھ معنی بجایہ زبانۍ ہندس آہنگس سیتۍ تعلق چھہ۔ اتھ ونو اسۍ لسانی تاکید۔ مثالہِ پاٹھۍ نمون انگریزی زبان۔ مثلا یہ جملہ:

They will liberate me tomorrow.

اتھ جملس منز چھہِ صرف زہ لفظ یمن پیٹھ تاکید چھہ۔ تاکید کنۍ چھہِ انگریزی زبانۍ منز دۅیہ قسمکۍ لفظ۔ اکھ قسم گوٚو تم لفظ یم جملک بنیادی معنی پیش کران چھہِ یعنی پیٹھمہِ جملکۍ liberate تہ tomorrow ، تہ بیاکھ قسم گوٚو تم لفظ یم جملک گرامر پیش کران چھہِ یعنی پیٹھمہِ جملکۍ They, will تہ me۔ گۅڈنکہ قسمکۍ لفظ یعنی اسم تہ فعل (صفت بیترِ تہِ) چھہِ تاکید والۍ تہ دوٚیمہِ قسمکۍ لفظ یعنی اسم ضمیر تہ حروف جار بیترِ چھہِ عام طور غیر تاکیدی۔

تاکیدی وزنن اندر چھہ شعرن منز لفظن ہند تاکید گنزرنہ یوان۔ یہ چھہ ہیجلۍ وزنکۍ پاٹھۍ سادہ وزن۔ ییتہِ ہیجلۍ وزنن منز ہیجلین ہند یکسان تعداد آہنگک اصول بنان چھہ، تاکیدی وزنس منز چھہ تاکیدن ہند یکسان تعداد آہنگ پیدہ کران۔

آرل سٹاین تہ جارج گریرسن ہویو یورپی محققو چھہ یہ خیال پیش کوٚرمت زِ کاشرِ شاعری منز ، واکھ ہیتھ، چھہ تاکیدی وزن ورتاونہ آمت، حالانکہ سانۍ زبان چھیہ نہ تاکیدی زبان۔ اتھ منز چھہ نہ لسانی تاکید یعنی جملن منز چھہ نہ اڈین لفظن پیٹھ زیادہ تہ اڈین پیٹھ کم زور تراونہ یوان۔ مگر گریرسن سندِ خیالہ چھہِ لل واکھن منز فی مصرعہ ژور تاکید برابر وقفن پیٹھ ورتاونہ آمتۍ۔ مثلا

آمہِ پنہ سدرس ناوِ چھیس لمان
کتہِ بوزِ دے میون میہ تہِ دی تاٰر
آمین ٹاٰکین پونۍ زن شمٰان
زو چھم بریمان گرہ گژھہ ہٰا

ہیجلین تلہ ( -) رکھ تراونہ سیتۍ چھہ پریتھ مصرعس منز ژورن جاین تاکید ہاونہ آمت۔ یمن لفظن یا لفظن ہندین حصن پیٹھ تاکید چھہ، تم چھہِ مقابلتہ زورہ سان یعنی پھورہ کہ تھزرہ سان پرنہ یوان۔  مگر تاکید چھہ نہ واکھن ہندِ وزنچ بنیاد۔ یعنی واکھن ہند تاکید چھہ نہ لسانی یا عروضی حقیقت تھاوان بلکہ چھہ یہ بقول امین کامل پرنک اکھ خاص طرز۔ حقیقت چھیہ یہ زِ واکھن منز تہِ چھہ بنیادی طور ہیجلۍ وزنے ورتاونہ آمت۔ مثلاوچھو امہ واکھچ ہیجلۍ تقطیع ۔

1 2 3 4 5 6 7 8
آمۍ پن سد رس ناوۍ چھس ل مان
کتۍ بوزۍ دے میون میتۍ دی تار
آ مٮن ٹا کین پونۍ زن ش مان
زو چھم برے مان گر گژھ ہا

گۅڈنکس تہ تریمس مصرعس منز چھہِ 8 ہیجلۍ تہ دوٚیمس تہ ژورمس مصرعس منز چھہ7 ہیجلۍ ورتاونہ آمتۍ، یوس اکثر واکھن ہنز وزنی ترتیب چھیہ ۔ سادہ تاکیدی وزنن منز چھہ نہ مصرعن منز ہیجلین ہند تعداد یکسان آسان، بلکہ چھہ ہیجلۍ تعداد کُنہِ ضابطہ ورٲے ہران/کم گژھان۔ مثالہ پاٹھۍ وچھون برونہہ کن کمنگس سنز مختصر نظم۔مگر واکھن منز چھہ ہیجلۍ تعداد یکسان۔ یہ چھہ تتھۍ وزنس منز ممکن یتھ منز ہیجلۍ گریند ورتاونہ آسہِ آمژ۔ کاشرس بول چالس منز چھہ لفظن پتہ کنہِ ینہ والۍ ژھوٚٹۍ ہیجلۍ (یعنی ژھوٚٹۍ مصوتہ : زیر تہ عینہ زیر) دباونک رحجان۔ اتھ دجحانس تحت چھہِ اکثر لوکھ یتھین لفظن مثلا "زبانہِ” بدل زبانۍ”، "شاعرییہ” بدلہ "شاعری”، "زندگیہ” بدلہ "زندگی” ، "نِشہ” بدلہ "نِش” تہ "بدلہ” بدل "بدل” بولان تہ لیکھان۔ یہ رحجان چھہ سانہِ شاعری تہ وزنس پیٹھ تہِ اثرانداز۔ پیٹھمس واکھس منز وچھو بنمین لفظن منز کتھہ پاٹھۍ چھہِ ٲخری ہیجلۍ دبان۔

آمہِ = آ+مہِ < آمۍ
پنہ = پ+نہ < پنّ
ناوِ = نا+وِ < ناوۍ
کتہِ = ک+تہِ < کتۍ
بوزِ = بو+زِ < بوزۍ
مٮہ تہِ = مٮہ+تہِ < میتۍ
گرہ = گ+رہ < گرّ
گژھ = گ+ژھ < گژھّ
دِیہِ = دِ+یہِ < دی

یمن لفظن منز چھہِ زیرِ یعنیِ[اِ] مصوتس پیٹھ مشتمل اند ہ ہیجلۍ ہلکہ تالرۍ تہ عینہ زیرِ یعنی [إ] مصوتس پیٹھ مشتمل اند ہ ہیجلۍ ہلکہ مشدد حالت پیدہ کران۔ وچھو یہ صوتی عمل بنمین مصرعن منز تہِ یم فارسی عروض مطابق وننہ چھہِ آمتۍ۔

قدم تہ سوٚدرہ طلاطم سمے تہ وتہ وٲناکھ (کامل)
و+تہ< وتّ

حسن نہ کنہِ تہِ ژۅاپارۍ حے تہ سین تہ نون (کامل)
ک+نہِ < کنۍ

اگر گرہست دیی موقعہ کانہہ تہ اسہِ کن آکھ (کامل)
ا+سہِ < اسۍ

یا پزِ نہ وۅں پشرُن یہ پنن زۅہرقہ واوس (راہی)
پ+زِ < پزۍ

یا لول تہ رتہ زول نتے د   ٕے تہ اماوس (راہی)
ر+تہ < رتّ

بییہِ کیا چھہ مدعا حسنک بییہِ کیا چھہ ندا عشقک (راہی)
ب+یہِ < بیۍ

پے آم دہلۍ گاشہِ ژندر کڈِ نہ بمن واش (عازم)
ک+ڑِ < کڈۍ

اچھہِ دارِ مثرر اوس اچھر ڈولہِ بٔرم راتھ (عازم)
ا+چھہِ < اچھۍ

تژھ تٍر یوان ٲس زِ رتھ شٹھہِ ہے رگن منز (عازم)
ش+ٹھہِ < شٹھۍ

وُنہِ اوس مٮہ حیرت تہِ رژھا خوف تہِ اتھۍ منز (راز)
وُ+نہِ < ونۍ

اتھۍ منز میہ کھژم کیف تہ پییہِ نندرِ زۅلا ہش (راز)
پ+یہِ < پیۍ

رژھرتھ چھیہ اگر تھونہِ تہ لگہِ نار حریرس (راز)
ل+گہِ < لگۍ

یہ گژھہِ یاد تھاون زِ خط کشیدہ لفظن ہندۍ ٲخری مصوتہ دباونۍ چھیہ نہ کانہہ عروضی مجبوری بلکہ یتھ پاٹھۍ میہ پیٹھہ کنہِ ووٚن کاشرِ بول چالک اکھ مخصوص صوتی عمل یس سٲنس پریتھ وزنہ نظامس منز تہِ نوٚن چھہ۔ اتھ صوتی عملس چھہ سانہِ زبانۍ ہندس بدلونس صوتی مزازس سیتۍ رشتہ یتھ کن امین کاملن یہ ؤنتھ اشارہ کوٚرمت چھہ زِ کاشرس آہنگس منز چھیہ نہ زہ ژھۅچہ آوازہ (یعنی زہ ژھۅٹۍ ہیجلۍ) اکس اکھ پتہ یوان تکیازِ یہ چھہ سٲنس مزازس خلاف۔یہ صوتی عمل چھہ زیادہ تر تمن لفظن منز سپدان یم دۅن ژھۅٹین ہیجلین پیٹھ مشتمل چھہِ۔

خالص تاکیدی وزنچ مثال دمو اسۍ E. E. Cummings سنزِ یمہِ نظمہِ سیتۍ۔

what if a much of a which of a wind (10)
gives the truth to summer’s lie; (7)
bloodies with dizzying leaves the sun (8)
and yanks immortal stars awry? (7)
Blow king to beggar and queen to seem (9)
(blow friend to fiend: blow space to time) (8)
— when skies are hanged and oceans drowned, (8)
the single secret will still be man… (9)

اتھ منز چھہِ فی مصرعہ ژور تاکید یم بولڈ یعنی مۅٹیو حرفو سیتۍ تہ تلہ رٕکھہ ترٲوتھ ہاونہ چھہِ آمتۍ۔ سیٍتی چھہ پریتھ مصرعہ کین ہیجلین ہند تعداد بریکٹن منز دنہ آمت۔ ظاہر چھہ زِ (واکھن برعکس)ہیجلین ہند تعداد چھہ نہ یمن مصرعن منز یکسان۔ البتہ چھہ تاکید یمن مصرعن منز یکسان طور بٲگرتھ یمہ کنۍ آہنگ پیدہ چھہ گوٚمت۔ یہ آہنگ چھہ تسندِ خاطرہ ژینن مشکل یمۍ سنز زبان تاکیدی آسہِ نہ۔

تاکیدی وزنن منز تہِ چھہ نہ ہیجلۍ وزنکی پاٹھۍ پدین یا ارکانن ہند عمل دخل۔ اتھ منز چھہ نہ لفظن یا ہیجلین ہند تعداد اہم بلکہ برابر وقفن پیٹھ ینہ وول تاکید یمہِ سیتۍ آہنگ پیدہ گژھان چھہ۔

یورپی محققن پتہ چھہ امین کاملن کاشرِ شاعری ہنزِ تاکیدی عروضی خصوصیژ کن یتھہ پاٹھۍ اشارہ کوٚرمت۔

"شاعر اوس کنہِ اصول تہ قاعدہ بدلہ محض پننیو کنو سیتۍ شعرن تقطیع (ژھینہ بندی) کران، یتھ منز سہ ساری کھۅتہ زیادہ اہمیت لفظن ہندِ تعدادہ بدلہ تہندس تلفظس پیٹھ دباو تراونس یا لمتھ لستھ ادا کرنس پیٹھ دوان اوس۔” (کۅنگ پوش، 1952)

اتھ اقتباسس منز چھیہ زہ کتھہ وننہ آمژہ۔ (1) کاشرِ شاعری ہند وزن چھہ نہ پیچیدہ۔ یعنی یہ چھہ کنہِ بیرونی اصول بندی بجایہ زبانۍ ہنزِ لفظن ہنزِ فطری ژھینہ بندی پیٹھ قایم۔  (2) اتھ منز چھہ نہ لفظن ہند تعداد بلکہ لفظن ہند دباو اہم۔

گۅڈنچہ کتھہِ پیٹھ شک کرُن چھہ مشکل تکیازِ یہ وزن چھہ لل دیدِ پیٹھہ احد زرگرس تام بلکہ نادمن، کاملن تہ راہی ین تہِ کنہِ اصول بندی ہند علم آسنہ ورٲے وجدانی طور ورتوومت۔ البتہ دوٚیم کتھ چھیہ بحث طلب۔ رحمن راہی ین چھیہ عروضس پیٹھ پننہ کتابہِ منز کاملنۍ یہے دوٚیم کتھ، یتھ پتہ کنہِ یورپی محققن ہندۍ بیان تہِ چھہِ، پنن مقالہ بنٲوتھ ورتاومژ۔ مگر تمۍ چھیہ اتھ سیتۍ سیتۍ کاملنہِ گۅڈنچہ کتھہِ برعکس یہ ہاونچ کوشش کرمژ زِ یہ وزن چھہ پیچیدہ اصول بندی ہند مظہر۔ اتھ سلسلس منز چھہ تمۍ یورپی محققن تہ شفیع شوق نہِ یتھ کتھہِ پیٹھ اعتبار کٔرتھ انگریزی زبانۍ ہند پیچیدہ وزنہ نظام اتھ پیٹھ منطبق کرنچ کوشش کرمژ۔

"کاشرین واکھن منز (چھہ) عروضک دارمدار انگریزی شاعری ہندۍ پاٹھۍ سۅرن ہندس زورس یا دباوس پیٹھ۔” (شفیع شوق، شیخ العالم تہ تمۍ سند زمانہ، ص ۲۳)=

اسۍ ہیکو یہ ؤنتھ زِ واکھن ہند بنیادی وزن چھہ ہیجلس پیٹھ تہ یمن ہند مخصوص طرزِ ادا چھہ تاکیدی تکیازِ واکھ تہ شروکۍ چھہِ نہ گیونہ یوان بلکہ پند، نصیحت تہ دانایی ہندِ شعری اظہار کہ طور تحت اللفظ وننہ یوان۔ لہذا اوس یہند طرزِ ادا خصوصی طور تاکیدی آسُن ضروری۔ واکھس برعکس چھہ وژُن خالص گیونک چیز تہ اتھ منزٲس نہ اتھ تاکیدی طرز اداہس کانہہ جاے۔ مگر دۅشونی فارمن ہند وزن چھہ ہیجلۍ وزن۔ واکھ چہ تہ وژنہ چہ اتھ فرقہِ کُن چھہ امین کاملن جوابن چھہ عرض پننہِ کتابہِ منز اشارہ کوٚرمت تہ یہ چھیہ اکھ اہم فرق۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s