محقق سنز غلطی تہ محقق سندۍ ترت


غلطی

ناجی منور چھہِ کلیات محمود گامی یس منز "شیرین خسرو” مثنوی ہندس متنس منز اکھ شعر یتھہ پاٹھۍ دوان:

شفیقا خاصہ اوسس ناو شاپور
بخلوت محرم اسرار مستور

شاپور ناوس تل چھہِ اکھ نوٹ یتھہ پاٹھۍ دوان:

"(1) نظامی ین چھہ پننہِ کتابہِ منز "شاور” لیوکھمت، قلمی نسخس منز تہِ چھہ شاور لیکھتھ۔”

مثنوی منز چھہ متنس اندر ناجی گوڈنکس حصس منز شاپور دوان، البتہ چھہ پتمس حصس منز شاپور بدلہ شاور دوان۔ اتھ حصس متعلق چھہ ناجی ونان زِ تم ستہ ہٲٹھ شعر چھہ اڈلیکہِ قلمی نسخہ پیٹھہ نقل کرنہ آمتي۔

ناجی یس چھہ کیاہ تام مغالتہ گومت۔ نظامی سنزِ مثنوی منز چھہ نہ کُنہِ جایہ شاور دتھ بلکہ چھہ شاپور دتھ۔ سے اوس ناو خسرو سندس خاص دوستس۔ یہ شاور کتہِ آو یہ چھہ نہ معلوم۔ ناجی ین کتھ کتابہِ منز چھہ شاور وچھمت، حالانکہ نظامی سنز مثنوی آسہِ یمو پانہ وچھمژ۔

اڈلیکہِ نسخک شارو ہیکہ کاتب سنز غلطی ٲستھ، میہ چھہ باسان یہ لفظ آسہِ کاتبن کنہ بوزمت۔ شاپور بدلہ آسین شاور بوزمت۔

نظامی سنزِ مثنوی منز چھہ یہ ناو گوڈنی اتھۍ شعرس منز یوان یمیک ترجمہ محمود گامی ین کورمت چھہ:

ندیمی خاص بودش نام شاپور
جھان گشتہ ز مغرب تالھاور

ناجی چھہ محقق۔ اگر یژھہ غلطی محققن گژھن، اسہِ مقلدن کیا بنہِ۔

 

ترت

محمد یوسف ٹینگ چھہ اتھ کلیات محمود گامی یس عرض ناشرس منز ونان:

"میانہِ تحقیقہ موحب کٔر تمۍ (محمود گامی ین) فارسی زبانۍ ہنز اکھ مثنوی گوڈنچہ لٹہِ کاشرۍ پاٹھۍ ترجمہ تہ پتہ بۆرن پننہِ زبانۍ ہند ہلم امہ شاندار زبانۍ ہندیو گوہر پارو سیتۍ۔”

یا تہ چھہ نہ یہ جملہ لیکھن تۆگمت۔ حالانکہ کتھ چھیہ نہ فلسفیانہ ز نثر لیکھنس ییہ دقت، نتہ چھہ یہ ٹینگ سند مضحکہ خیز تحقیق۔ اکہ طرفہ چھہ ونان "میانہِ تحقیقہ موجب” یعنی تحقیق چھن کۆرمت تہ بییہ طرفہ چھہ ونان "اکھ مثنوی” یعنی یہ چھیہ نہ پتاہ کۅس مثنوی چھیہ۔  کِنہ یہ چھیہ بلۍ گیلا برونہہ کُن تراومژ تاکہ ینہ خلق ونن زِ محمود گامی یس پیٹھ چھہ صرف ناجی ین تحقیق کۆرمت، تہِ چھہ میہ (ٹینگن) تہِ کۆرمت۔

 

مثنوی ین ہنز گرند

ناجی منور چھہ کلیات محمود گامی یس منز داہ (10) مثنوی دوان۔ امہ برونہہ چھہ رسول پونپر اکس مضمونس منز ونان ز محمود گامی ین چھیہ ٲٹھ نو مثنوی لیچھمژہ۔ امہ برونہہ چھہ محمود احمد اندرابی اکس مضمونس منز لیکھان ز محمود گامی ین چھیہ نو مثنوی لیچھمژہ۔ گویا ناجی منور چھہ کلیات کس دویمس ایڈیشنس منز اکھ مثنوی ژرے دوان۔ مگر کلیات کہ امہ ایڈیشنہ برونہہ چھہ شفیع شوق اکس مضمونس منز ونان ز محمود گامی ین چھیہ کاہ (11) مثنوی لیچھمژہ۔ میہ باسان شوقن چھیہ ٹینگ سنز یہ "تحقیقہ موجب” "اکھ مثنوی” تہِ شمارس تھاومژ، نتہ زن گوژھ سہ پننسے بٲیس پژن۔ حالانکہ "کاشر ادبک تواریخ” کتابہ منز چھن یمن ہند تعداد داہے (10) وونمت۔

 

 

One thought on “محقق سنز غلطی تہ محقق سندۍ ترت

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s