کاشر ادب – اکھ بہترین رسالہ (قسط 2)

santosh 2

اگر نہ کاشر ادب درامت آسہِ ہے، ممکن چھہ نیب تہِ ما آسہِ ہے نہ درامت۔ کامل گو٘و کاشر ادب نش دۅیو شمارو پتہ الگ، وجہ چھہ نہ پتاہ۔ مگر سنتوشس سیتۍ روز امۍ سنز دوستی برقرار ۔ کامل رود کاشر ادب رسالس منز چھپان تہ سنتوش تہِ رود نیب رسالس منز چھپان، خاص کر تمۍ سنز ظرافت نگاری یۅس سہ بکواس کاشیمری فرضی ناوہ لیکھان اوس۔ سنتوشس پیٹھ چھہ واریاہ لیکھنہ آمت مگر واریاہ کینہہ چھہ لیکھنے تہ تمۍ سندِ ہمہ گیر شخصیتکۍ واریاہ پہلو چھہِ اکثرن نش پوشیدے۔ بقول مظفر عازم "رومانوی ہیرو سندۍ پاٹھۍ جوش تہ جذبہ سان محبت کرن وول، اغواہک پلان بناون وول، گرفتاری ہند سامنہ کرن وول، نیک زندگی کرن وول، کھلہ ذہن تھاون وول، اندہ وندہ فیاض، متنوع زندگی کرن وول سنتوش ۔۔۔ چھہ تژھ شخصیت یمۍ سنز کہانی وننس لایق چھیہ۔” (فیس بک)  سنتوشن لیکھۍ افسانہ، ناول، نظمہ، غزل، تنقید، ظرافت، فلسفہ، امۍ کو٘ڈ رسالہ۔ امہ علاوہ اوس یہ تھیٹرس سیتۍ وابستہ تہ ہندروستان کین اہم مصورن منز شمار۔

(پیٹھہ کنہِ تصویر غلام رسول سنتوش)

اکی وقتہ، لرِ لو٘ر نیرتھ ما آسہِ ہے یمن دۅن رسالن پانہ وانۍ مان مان تہِ۔ نیب رسالن اگرچہ ادبس منز جدید سوچ پھانپھلوو تہ اکھ نو٘و معیار قایم کو٘ر، امیک پیش رو اوس ژکہ سنتوشن کاشر ادب۔ مگر نیب بنیوو نوِ رجحانک نمایندہ۔ نیب 9 کس اداریہس منز چھیہ کاشر ادب رسالس متعلق یہ شکایت میلان "کنہِ ہم زمانہ رسالس متعلق کینہہ ونن چھہ نہ اخباری آدابو انۍ جان۔ مگر اسۍ چھہِ نہ رسالہ ذاتی مفادو یا ہارہ کماونہ خاطرہ کڈان بلکہ چھہ یہ زبانۍ ہند ژکھ یمۍ اسۍ بیہ سۅکھ چھہِ بناوۍ متۍ۔ اتھ کن وچھتھ ہرگہ اسۍ پانوانۍ تنقید تہِ کرو سہ گژھہِ اسونہِ ہۅنجہ ویتراونہ یُن۔ کاشرِ ادبک بانی تہ اڈیٹر چھہ غلام رسول سنتوش۔ اتھ چھہ نہ شک زِ امس چھہ کاشرِ زبانۍ پوچھر دنک سٲنی پاٹھۍ سخ ہمسوس۔ مگر پانہ کشیرِ نیبر روزنہ کنۍ یمن دوستن امۍ یہ رسالہ وزِ وزِ حوالہ کو٘ر تمو کٔر امچ تژھ خراب روایت قایم زِ زبانۍ فایدہ واتنہ بدلہ ووت نقصانے۔ اکہ لٹہِ دراو زہ ژور شمارہ تہ گو٘و بند۔ وہرۍ جوراہہ دراو بییہ مگر نون ریتن منز درایہ کل بل تریہ شمارہ۔ وۅنۍ گیس بییہ زہ ریتھ زِ نو٘نے چھہ نہ کنہِ۔ حالانکہ رسالہ چھہ ریتوار۔ یہ صورت چھیہ نہ جان۔ امیک اثر چھہ زبانۍ پیٹھ تہِ ناکارہ پیوان تہ ہم زمانہ رسالن تہِ برونہہ پکنس تھۅس یوان۔”

کاشر ادب اوس سنتوش سندین پونسن پیٹھ نیران، پونسن ہنز کمی نہ آسنہ باوجود ہیو٘ک نہ یہ رسالہ تواتر سان نیرتھ، تکیازِ یمن شخصن یہ تیار کرناونچ کٲم ذمہ ٲس تم ہیکۍ نہ سنتوش سندس جذبس پوشتھ۔

ستوشس پیٹھ اوس دینا ناتھ نادم سنزِ شاعری ہند سیٹھا اثر، لہذا چھہ نہ یہ کانہہ اتفاق زِ اتھ رسالس منز چھپییہ نادم سندۍ واریاہ چیز یمن منز "حارثات” ناوہ چیو ستو نظمو علاوہ سانیٹ، نوِ طرزک غزل، میٔژ، ڈلہ بٹھۍ بٹھۍ، ژور، گاسہ تُل، زندگی، ونل ناوچہ نظمہ شامل چھیہ۔ نادم صابس سیتۍ سنتوشن اکھ کار آمد انٹرویو تہِ چھپیوو اکس شمارس منز۔ ییتہ نس تھاوون نادم سنز میٔژ نظم رژھرتھ تکیازِ یہ چھیہ نہ تہنزِ شایع کتابہِ منز شامل کرنہ آمژ۔

میٔژ

مژھج میٔژ
گرٕٹ، شوخ، سریہہ دار، شبنمۍ
پشج پۆٹ پشمینہ ٲوج
شہج بونہ ہند شاہ، وشنۍ گٲو ہند تھن
طرحدار، زٲوج، ملایم
مژھج میٔژ ملایم

*

میہ مۆند آب واراہ
مگر ییلہ وچھم دل جگر شانت سپدم
چھہ زن پھرستہ پھمب از ژواپارۍ وہرتھ
اتھو تلۍ میہ پوٚک ماجہ ہند ٹوٹھ آلو
نظر غیب گیہ واوہ مالن اندر
ہی چھیہ پراران پستہ جار گو٘ژھ واو چھاون
تہ پمپوشہ پیٹھۍ رکنہِ وو٘تھ اکھ خیالا
چھہ کچہ پوت پھنمبہ تو٘نب ونی ماجہ زامت
نرم لوو کلہ رن
گُرس کئۍ، وشنۍ تھنۍ
مژھج میٔژ، طرحدار، زٲوج، ملایم
مژھج میٔژ، ملایم
گرٕٹ، شوخ، سریہہ دار، شبنم

*

رنگو منزہ چھہ رنگ پۅختہ اڈہ زوو  جافر
اگر دٲن کٔنڈ لج دُسس گو٘و  سہ بادامۍ
ژُدشۍ زونہ ہند گاہ، لیدر اۆبرہ سٔدراہ
ژندُن مٲنزِ شر ہیتھ
منڈتھ کنکہ رنگۍ پۆٹ
چھہ نتہ دانہِ تاپس
سندِج ژیرۍ آمژ  پھۆلتھ وُڈرہ پیٹھۍ کنۍ
گرٕٹ، شوخ، سریہہ دار، شبنم
مژھج میٔژ، ملایم
طرحدار، زٲوج تہ دایم

*

چھیہ  خۅشبو  گلابس پنن راز قایم
ژٔڈس منز یہ دۅد تھنہ تلک مشک ادفر
نتے زاشُرس آیہ زامن
یُتھے آس مژرن ہوا نافہ سپدیو
وزنۍ عطرِ لج بالہ پیٹھۍ نیرۍ پوشن
تہ اکھ واوہ رنگ آیہ زن پھللہ چھاوان
کۅنگ مشک کوفور للہ وان لۅلہ منز
چھیہ ہرنن شہس زنتہ کۆستورۍ کھسہ وس
چھہ عنبر تہ وُدہ پانہ وانۍ راس کھیلاں
خبر ووت دۅہ کوت؟
اگر رود  انہِ نیرِ  وہرٲژ مہرینۍ
مشکدار وردن پھۅلن یوسمن
لگہ دِوے زن نشاطس
طرحدار، زٲوج  تہ دایم
مژھج میٔژ ملایم
چھیہ  خۅشبو  گلابس پنن راز قایم
مژھج میٔژ ملایم

*

امیک رنگ و بو یا پشُل یا پھہُر چھہ
ترُن یا وشن زانہِ تن میانۍ کیُتھ چھہ
بہ ییلہ زاس تیلہ آس امۍ سند شۅزر ہیتھ
یہ بتہ مٲج ازلچ
دٔہر ۍ بوج ابدچ
میہ لۅکچار رنزہ نوو امۍ لول برۍ برۍ
پننۍ دید میہ رٲوم امی دید میہ لٲجم
دِتن پھہہ بۆرن سریہہ سگُن میون باڈو
مگر از میہ گۅڈنی گیوُن بوز امۍ سند
میہ ما ٲس خبر میٔژ گیوُن زانہِ کوتاہ
یُتھے آب پۆک رۅنہِ ہیژن وزنہِ
تھج نارہ نے منز
وۅگن سینہ بترٲژ  زن شولہ ون نب
بٔرتھ آو دۅدہ وُے یہ ما گٲو ماجے
ہیۆتن لۆت وُزن سریہہ میٔژے لولہ ماجین
تہ سۆت سۆت صدا  اکھ
تہ لۆت لۆت مدٕر  لے
رٔسل گنگرایا، مژھج تان نغمچ
ہہ شو شو، شہ ہو ہو
ہہ ژھہِ ژھہِ تہ ژھہِ ژھہِ
اموب ماجہ ہیچھہ نوو شُر وۅدنہِ روزن
ہیۆتن د اں کلین گۅڈ  لگن دیوہ کھہس منز
یہ شو شو تہ ژھہِ ژھہِ
یہ ہو ہو تہ سی سی
یہے بولۍ   کۆستورۍ دچھ  پونپرن ہیچھ
یہے ککلہِ لٔب کۆر قمرۍ اتھۍ نقل ما
یہ واوُک صدا پۆت صدا ما چھہ امہ کے
طرحدار زٲوج تہ دایم
مژھج میٔژ ملایم
چھیہ ازلچ تہ ابدچ یہ سُرتال قایم
مژھج میٔژ ملایم

*

کران چھم میہ دل ڈُلگناہ دِمہ بہ ییتہ نے
بہ کرہ سران میٔژِ منز بہ ملہ خاک پانس
تہ  میٔژِ مۆہنیوا جنگلی پتھ ونس منز
بہ وچھہ قۅدرتک سُے گۅڈک جلوہ شاید
سہ ییلہ آدمس دستِ قدرت پھرِتھ گو٘و
سہ ییلہ تمۍ کنس تل گژھتھ "قم” ونیونس
دپیونس ژہ وۅتھ تھۆد
تہ ادہ کیا گیوو کانہہ قدم برونہہ تہ کانہہ پۆت
تہ کانہہ جل پچیوو،  کانہہ ڈۅچر دِتھ پچیو سو٘ت
تہ سُے ان ہِشر پھۆر جہانس
بہ ملہ خاک پانس بہ کرہ شران میٔژِ  منز
بہ چھلہ عالمس مل
بلن دادۍ لوکن ژلن جادۍ زدہ لس
تہ ہییہ زندگی بییہ کرنۍ نٔو تیاری
تہ ییہ بارسس میٔژ
مژھج میٔژ
گُرٕٹ شوخ سریہہ دار شبنمۍ
پِشج پوٹ پشمینہ  ٲوج
شہج بونہِ ہند شاہ ، وشنۍ گٲو ہند تھن
طرحدار زٲوج ، ملایم
مژھج میٔژ ملایم
***

(یہ نظم دژ مظفر عازم صٲبن ٹایپ کٔرتھ، یمہ مۅکھہ شکریہ کرن لازم چھہ۔)

یہ نظم چھیہ تقریبا گال کھاتس گمژ تکیازِ امہ نظمہِ ہند چھہ نہ کٲنسہِ پے پتاہ۔  یہ ہیکہِ امۍ سنزن شامل کتاب نظمن مقابلہ ڈیج ٲستھ مگر خالص یمہ حقیقت کنۍ تہِ زِ یہ چھیہ نادم سنز نظم چھیہ یہ رژھرنس لایق۔ امہ نظمہِ ہند ڈیجر ہیکہِ یمہ کنۍ تہِ ٲستھ زِ نادمن چھیہ سیٹھا کم نظمن نظرِ ثانی کرمژ۔ یمہ وقتہ یہ نظم لیکھنہ آمژ چھیہ تمہ ساعتہ ٲس نظمہ ہنز مروج شکل یہے چناچہ چھیہ امہِ شکلہِ ہنزہ نظمہ اسہِ اردو شاعر ن م راشد تہ میراجی یس نش تہِ میلان یمن منز تکراری عنصر غالب چھہ۔

رسالس منز چھپیوو نادم سنزن ژور تہ گاسہ تل دۅن نظمن پیٹھ اختر محی الدین تہ فرحت گیلانی سند تبصرہ۔ (یہ تبصرہ ییہ جلدے نیب ویب سایٹہِ پیٹھ دستیاب کرنہ۔)

تۅہہ نش ما کٲنسہِ جواب؟

"بٲتن الگ الگ تاریخ آسن چھہ نہ ضروری تکیازِ شاعری چھیہ نہ تاریخواری مطابق
مۅلۅن سپدان۔ وۅنۍ گوو فروعی معاملہ ؤنراونس چھہِ کم کاسہِ مدد کران۔”
— امین کامل، سرنامہ ‘یم میانۍ سۅخن’

"شاعری چھیہ دورن منز لیکھنہ یوان، دۅہن تہ ؤرین منز نہ۔ مگر یہ تہِ گژھہِ
یاد تھاوُن زِ داہ ؤری تہِ ہیکہِ اکھ دور ٲستھ، خاص کر تیزی سان
بدلونس وقتس منز۔”
— منیب الرحمن

شفیع شوقن لیوکھ کاشرِ ادبک تواریخ یُس اکھ بوڈ کارنامہ چھہ۔ میہ چھہ امیک گۅڈنیک ایڈیشن وچھمت یتھ منز واریاہ خٲمیہ آسہ۔ تنہ پیٹھہ آے اتھ زہ تریہ ایڈیشن تہ میہ چھیہ وۅمید گۅڈنکہ ایڈیشن چہ ساریۍ حٲمیہ آسن درو سپزمژہ تکیازِ شوقس ٲس پانہ تمن خٲمین پیٹھ نظر۔  امہ تواریخ علاوہ چھیہ ضرورت زِ کاشرِ ادبہ کس جدید دورس پیٹھ، یُس 1960 پیٹھہ 1980 تام جاری رود، ییہ تواریخی کٲم کرنہ۔ یہ کٲم گوژھ یونیورسٹی ہند کانہہ طالب علم انجام دین۔ یہ ہیکہِ پی ایچ ڈی یک تہِ موضوع بٔنتھ۔ 

کمۍ کیا لیوکھ تہ کر لیوکھ، پتھ کُن لیکھۍ متین چیزن کر تہ کٲژا تبدیلی آیہ کرنہ یمن کتھن پیٹھ گوژھ تحقیق سپدن۔ ادبچ روایت چھیہ نہ ٹی ایس ایلیٹ، جیرالڈ مینلی ہاپکنز سنزہ کتھہ چکاونہ سیتۍ قایم گژھان، نہ چھیہ سۅ خالص کتابہ چھپاونہ سیتۍ قایم گژھان یوت تام نہ اتھ تمام کارکردگی اندۍ اندۍ اکھ ادبی کلچر کھڑا گژھہ،ِ یوت تام نہ یمن چیزن پیٹھ کتھ گژھہِ۔ کتھ چھہ نہ مطلب صرف تجزیہ تہ تنقیدی مضمون بلکہ لیکھن والین، تہنزِ زندگی، تہنزن کتابن، تہندس کلامس متعلق  پریتھ کونہ کتھ سپدِِ۔

سانین بزرگ ادیبن چھہِ ہمیشہ پننین چیزن غلط سنہ تلہ کنہِ دینک عادت اوسمت۔ کلیات مہجورس منز چھہ واریاہن چیز ن غلط سنہ دِتھ، دینا ناتھ نادم سنزِ کتابہِ منز چھہ واریاہن چیزن ٲنی مٲنی سنہ دِتھ۔ تس چھہ نہ یہِ تہ یاد روزان زِ امہ برونہہ ہے میہ اتھۍ چیزس اکھ سنہ دیت، از کتھہ پاٹھۍ دمس بیاکھ سنہ۔ رحمن راہی یس اوس عادت یہ زِ سہ یُس تہ چیز کنہِ رسالس سوزان اوس تتھ اوس شیہ ؤری، داہ ؤری پرون سنہ تلہ کنہِ دتھ تھاوان۔ زن اوس سہ پنن کلام دہن ؤرین پتھ تھٲوتھ پرانہِ شرابکۍ پاٹھۍ مارکس منز کڈان۔ یہ اوس سہ اکھ سوچتھ سمجتھ  گپلہ کران۔ امین کامل، مظفر عازم ہوین شاعرن اوس نہ یہ مسلے تکیازِ یم ٲسۍ سیتی کتابہ چھپاوان۔ کاملن چھپاوِ 1972 تام ژور شعرہ سۅمبرنہ، مظفر عازمن تہ چھپاوِ 1974 تام زہ سۅمبرنہ، مگر باقی شاعر رودۍ کلامہ پتھ کن تھاوان۔ وجہ اوس صاف یتھ پیٹھ بییہ کنہِ ساعتہ کتھ گژھہِ۔

نادم، فراق تہ راہی رودۍ گوش دوان حالانکہ کلچرل اکاڈمی ٲس یہند کلام چھپاونہ خاطرہ ہمیشہ تیار۔ ٲخرس پیٹھ نیہ یمو کنی کتابا چھپٲوتھ، یمن منز چیزن سنہ سیتۍ سیتۍ لیکھکھ چھہِ،  یم اکثر غلط چھہِ۔ یہند یہ وطیرہ وچھتھ ژٔٹ کاملن سلی کتھ۔ تمۍ چھپٲو نہ 1972 پتہ کانہہ کتاب بلکہ سپد سہ 1980 پتہ کاشرِ ادبی ماحول تہ کشیرِ ہندِ ماحولہ نش یوت بدظۅن زِ تمۍ کور شاعری ہند کارخانے بند۔ صرف لیچھن تم خاص نظمہ مثلا تٲے نامہ، حمد تہ لڈی شاہ بیترِ یمن منز تمۍ دراصل اتھ صورت حالس پیٹھ افسوس ظاہر کورمت چھہ۔ اکہ قسمکۍ مرثی۔ ییلہ کامل  2001 منز امریکہ کس چکرس پیٹھ آو اتی نیو میہ تسند سورے کلام تہ کورم جمع کتابہ ہندس صورتس منز۔ نیب رسالہ منزہ تہِ کوڈم قصیدہ تہ باقی نظمہ یم 1972 برونہہ چھپیمتۍ ٲسۍ مگر کاملس اوس نہ کنہِ کتابہ منز شامل کرنک موقعہ میولمت۔ امۍ سنزِ عدم دلچسپی کنۍ لگۍ اتھ کتابہ چھپاونس پانژھ شیہ ؤری۔ تہِ ٲس نہ تس وۅنۍ یہ کلام چھپاونس منز دلچسپی۔

rah

کامل چھہ کاشر ادب رسالس 1967 منز پنن تازہ غزل بحثہ خاطرہ سوزان:

بہار پوک نہ اگر چانہِ ترایہ گرایہ میہ کیا
گلالہ داغ جگر ہیتھ چھہ جایہ جایہ میہ کیا

راہی تہِ چھہ غزل سوزان تہ اتھ تلہ کنہِ لیکھان 1958۔ دہہِ وہرۍ پرون یہ غزل چھپاونک کیا مقصد چھہ اوسمت؟ دہن ؤرین اوس نا امۍ کانہہ نوو غزل وونمت؟ کنہِ یہ اوس تیتھ زبردست غزل یس نہ اگر چھپہِ ہے تہ نقصان گژھہِ ہے۔ وچھو غزل کیا اوس یُس دہہ وہرۍ چھپاون ضروری اوس:

بلۍ تہِ نو آو یہ رنگ حسن خیالس یارو
داغ تھاواں ہا وچھم سونت گلالس یارو

اگر یہ غزل پزۍ پاٹھۍ 1958 ہک اوس۔ راہی سند یہ 1967 منز چھپاوُن چھیہ مندچھ۔ 1967 منز اوس کاشرس منز تہِ دۅہ کتہِ کور ووتمت۔

کامل چھہ سوزان اتھۍ رسالس 1976 منز پننۍ زہ غزل:

سمے صدا چھہ ژہاں سنگرن جگر کس پتھ
گگن ہوا چھہ تلاں تارکن مژر کس پتھ

تہ

لکھ چھہِ پھیراں عجیب باوتھ ہیتھ
معنہ روستے حسیں عبارتھ ہیتھ

راہی تہ چھہ پننۍ نطم "آورن” سوزان ، تلہ کنہِ چھس تاریخ لیکھان 1970۔ شیہ وری پتھ۔
راہی یس کیازِ پننین چیزن تلہ کنہِ تاریخ لیکھنک ضرورت پیوان؟ دویم کتھ سہ کیازِ ہمیشہ شیہ ؤری، داہ ؤری پرون کلام چھپاونہ خاطرہ سوزان؟

یم چھیہ سوچنس لایق کتھہ۔ تۅہہ نش ما کٲنسہِ جواب؟