حبہ خاتون مسودہ، غایب شد!

غلام احمد مہجورن اوس وننہ کنۍ حبہ خاتون ناوہ اکھ کتابچہ لیوکھمت شاید 1951 منز۔ یہ اوس 190 صفحن ہند۔ کلیات مہجورس منز چھہ ٹینگ صٲب "مہجورنۍ تصانیف و تالیفات” ناوہ ساڈن ترین صفحن پیٹھ اکھ لسٹ دوان، مگر اتھ منز چھہ نہ یہ حبہ خاتون مسودہ شامل۔ میہ چھہ کامل صٲبس نش بوزمت یہ تمن اوس مہجور سندۍ زرۍ عبدالرشید صٲبن وونمت زِ سہ مسودہ اوس اکیڈمی ہندۍ سیکریٹری ین ابن مہجورس نش چھاپنہ خاطرہ نمت۔ مگر تمیک چھہ نہ اکیڈمی منز کانہہ نیال تہِ۔ امیک رسید چھہ تمن نش موجود۔

ابدال مہجور صابس آسن اتھ متعلق معلومات۔ جان گیوو تم اگر اتھ متعلق کینہہ ونہن۔ وچھن اوس زِ مہجورن کیا اوس اتھ کتابہِ منز حبہ خاتونہِ متعلق لیوکھمت۔ مہجور چھہ اکھ اہم شاعر تہ امۍ سند کانسہِ کاشرس شاعرس متعلق تحریر تہِ آسہ اہم۔

یہ مسودہ گۆو کۆت ٲخر؟

وزمل

امہِ ناوہ چھیہ مہجور سنز 11 ہن بندن ہنز اکھ نظم کلیات مہجور صفحہ 210 تا 212۔ کینژن مصرعن ہنز تصحیح چھیہ پیش کلام مہجورس سیتۍ دلچسپی تھاون والین ہندِ خاطرہ۔

کلیات: نورہ وزملۍ یے پورہ ہاو پان
صحیح: ۔۔۔ وارہ ہاو پان

کلیات: پریمہ رس بٲگران وژھکھے کھنہ بلۍ یے
صحیح: ۔۔۔ چھکھے کھنہ بلۍ یے

کلیات: وٲریو یِتھ چھکھ پھیرتھ گژھان
صحیح: وٲرِوِ یِتھ ۔۔۔

کلیات: ساونین کیت چھہ نہ یہ سمسار جان
صحیح: سۅندرین کیت ۔۔۔

کلیات: درسہ کُس لۆب چھے کران مسولۍ یے
صحیح: درسہ کُس لوٗب ۔۔۔

کلیات: ناحق خون ما درایکھ ولۍ ولۍ یے
صحیح: خون ناحق ما درایکھ ملۍ ملۍ یے

کلیات: بازۍ مہجورس کٔرے ازلۍ یے
صحیح: ۔۔۔ کٔر یہ ازلۍ یے

کلیات: سورہ پھلۍ گنزرکھ تسند دورہ پھلۍ یے
صحیح: سُرہ پھلۍ ۔۔۔ دُرہ پھلۍ یے

اتھ بٲتس چھہ نہ تاریخ درج۔ میانیو معلوماتو مطابق چھہ امیک تاریخ 5، جولایی 1941۔

بے وفایی شیوہ دلدار چھا

کلیات مہجورس منز چھہ گوڈنیک بٲتھ یہ:

ونتہ ویسۍ یے بے وفایی شیوہ دلدار چھا
نازنینن مہ جبینن قتلہ غارت کار چھا

اتھ غزلس چھہِ 9 شعر دتھ۔ گوڈنی امہ کین کینژن مصرعن ہنز تصحیح۔ اکھ مصرعہ چھہ یتھہ پاٹھۍ دتھ:

سینہ سوزن عاشقن دل شیہلن یامتھ وچھن

یہ مصرعہ چھہ وزنہ نش ڈلان تکیاز لفظ چھہ شیہلہ ہن بدلہ شیہلن دنہ آمت۔ اصل لفظ چھہ شیہلہ ہن، شاید چھہ مرتبن اتھ گرامر عیجب باسیوومت لہذا چھہس شیہلن کورمت حالانکہ شیہلہ ہن چھہ گرامر کہ لحاطہ صحیح۔

مقطعہس چھہ گوڈنیک مصرعہ یتھہ پاٹھۍ دتھ:

زاگ ہیتھ برتل غزل وقتن برس الہ الہ کران

غزل وقتس چھہ یتھہ پاٹھۍ نوٹ دنہ آمت:
غزل وقت = گجر کا وقت (ہندی)

صحیح چھہ، مگر غزل وقت چھہ نہ غ سیتی یہ چھہ گ سیتی  گزل وقتن ۔۔۔

عبدالاحد آزاد چھہ "برتل” لفظن نش "ہرشب” دوان۔ خبر سے ما چھہ صحیح۔ مہجورن ما آسہن برتل لفظ بدلاوۍ متۍ۔ ہرشب سیتۍ چھہ بر تل تہ برس الہ الک تکرار دور گژھان۔

 

بدل کتھن کن:
پیر محی الدین مسکین سند اکھ بٲتھ چھہ یتھہ پاٹھۍ:

ونتہ ہے ویسۍ عشقہ سوزس کن تھٔوتھ دلدار چھا
تن میہ زاجم عشقہ نارن مارہ موت بے عار چھا
تندرنۍ ریہہ چھم میہ سینس حال اندرم باوہ کس
بوزنس کانہہ درد مندا مشفق غم خوار چھا
(کیہہ تام) بے چارہ مسکین پیوو وستھ در کوے دوست
بستہ چھا دیوانہ چھا یا طالب دیدار چھا

عبدالاحد آزاد چھہ مسکین سند سنہ وفات 1947 برونہہ ترہہ پنژترہ وری دوان۔ لہذا چھہ مسکین سند غزل گوڈہ آمت۔ مہجورن چھہامی سندۍ سے غزلس پیٹھ پنن غزل وونمت۔ ناجی منور چھہ ونان ز مسکین سنزِ قبرہ پیٹھ چھہ 15 شعبان 1340 ھ لیکھتھ۔ امہ حسابہ چھہ مسکین سنز وفات 1922 واتان۔

امہ ردیف قافیچ چھیہ حقانی سنز تہ اکھ غزل۔ کٲنسہ اگر میلہِ، تمچ ریفرنس دی تو۔

مہجور سندس غزلس چھہ کلیاتس منز مہجور صابنہِ اتھہ یاداش ناوہ نوٹ دتھ۔ یس امہ غزلک تاریخ 1915 ہاوان چھہ۔ حالانکہ امیک تاریخ گژھہ 1918 آسن۔ تکیاز ناجی تہ شوق چھہ کاشر ادبک تواریخس منز امیک تاریخ 1918 دوان۔

پروفیسر پشپ تہِ چھہ 1918 ونان۔ بقول پشپ تمو اوس یہ سنہ پانہ مہجور سنزِ بیاضہ پیٹھہ تلمت۔ تم چھہِ ونان زِ یہ چھہ کنہِ مصلحژ کنۍ ڈانہ آمت۔

امین کامل تہِ چھہ ونان زِ تمن چھہ مہجورن امیک سنہ بکرمی 1974 وونمت، یس 1918 بنان چھہ۔ (کونگ پوش اپریل 1952)

عجیب کتھ چھیہ زِ کلیات مہجورس منزے چھہ امہ بٲتک سنہ بییس جایہ (صفحہ 19) 1927 دنہ آمت۔  سہ چھہ غلط۔

مہجورن بیاکھ بٲتھ

کشیمری زبان اور شاعری حصہ دوم اندر چھہ آزاد حسن شاہ بیدل سند بٲتھ دوان:

سنہ کۆرنم چانۍ امٲرۍ یے لو
زار ونہے بوزی ونہارۍ یے لو

مہجورن چھہ اتھۍ پیٹھ پنن بٲتھ وونمت یس کلیات مہجور صفحہ 103 تہ 104 پیٹھ دنہ چھہ آمت۔ یہ بٲتھ چھہ مہجورن دراصل حسن شاہ سندس بٲتھس جوایا وونمت۔ بٲتھ چھہ یتھہ پاٹھۍ دنہ آمت

طوطہ وولمت چانۍ امارۍ یے
سوز دل میون بوز ونہارۍ یے

جامہ وۅزلۍ کامہ دیو لٲگتھ دراو
شامہ ژھایے روگہِ روگہِ باغس دراو
پوشہ چمنن مشک گۆو جارۍ یے
سوز دل میون بوز ونہارۍ یے

وارہ کارہ چھہ اتھ بٲتھ منز "لو” پیومت۔ دراصل ٲسۍ پرانہ زمانہ لوکھ بٲتن منز آخری لفط یس مکرر یوان آسہِ ہے اکی لٹہِ لیکھان۔ شاید چھہ مہجور سندین کاغذن منز تہِ یہ بٲتھ یتھے پاٹھۍ لیکھتھ، تور تام چھہ نہ کلیاتک اصل ترتیب کار ووتمت تہ نہ نقلی ترتیب کار۔

بٲتک صحیح پاٹھ چھہ یتھہ پاٹھۍ

طوطہ وولمت چانۍ امارۍ یے لو
سوز دل میون بوز ونہارۍ یے لو

جامہ وۅزلۍ کامہ دیو لٲگتھ دراو
شامہ ژھایے روگہِ روگہِ باغس دراو
پوشہ چمنن مشک گۆو جارۍ یے لو
سوز دل میون بوز ونہارۍ یے لو

اتھ بٲتس چھہِ یمن مصرعن منز تہِ غلطی

گلاب تھرِ وولمت سنبلو نال

وارہ وچھتھ مارہ متہِ یتہ ساتھا

صحیح مصرعہ گژھن یم آسنۍ:

چھہ گلاب تھرِ وولمت سنبلو نال

وارہ وچھہتھ مارہ متہِ یتہ ساتھا

آخری مصرعہ تہِ چھہ غلط دنہ آمت

معنہِ اتھ کیا بوزن ہندوارۍ یے

یہ چھہ نہ بالکلے وزنس منز۔ ہیرہ پیٹھہ بون تام سورے وزنس پیٹھ تہ یہ اکھ مصرعہ بے وزن، ضرور چھیہ پرنس منز غلطی گمژ۔ امچ چہ صحیح شکلہِ ہنز تلاش چھہ جاری۔ دور چھس، نتہ آسہم امیک صحیح پاٹھ تہِ ژھونڈمت۔
 

تبرِ چھۅکھ

امہِ عنوانہ چھیہ مہجور سنز اکھ نظم کلیات مہجورس منز شامل۔ اتھ نظمہ متعلق چھہ شان نزول ز مہجور صابس ٲس کلس پتی کنۍ مکژ لجمژ یمہ کنۍ تم تقریبا ریتس ڈۅڈس ریتس بیمار رودۍ۔

اتھ چھہ ٹینگ اکھ شعر یتھہ پاٹھۍ دوان

دوپنم میہ چانہِ مارنک اوسم نہ کانہہ خیال
بے اختیار ادہ گینژ کہِ نیرتھ تبر گیم

حاشیس منز چھہ معنی لیکھان:
گینژ : اچانک، اتفاقا

میانہِ حسابہ چھہ یہ غلط۔ زبان دان زانن ز گینژ چھا کانہہ لفظ تہ تتھ چھا اچانک معنی۔ اصلی لفظ یس شعرس منز گژھہِ آسن چھہ "گونژھ” یعنی مکژ درایہ دنہ نیبر۔ اتھ دنس یا سراخس یتھ منز مکژ آسان چھیہ، چھہِ "گونژھ” ونان۔

تبر دارس ٲس نہ اتھہ منز تبر نیرتھ ژجمژ یتھہ پاٹھی امہ بٲتہ کس شان نزولس متعلق لیکھنہ آمت چھہ، بلکہ آسہِ دنہ منزہ مکژ درامژ یُس زن اکثر سپدان چھہ۔

بے اختیار ادہ گینژ کہِ نیرتھ تبر گیم

یہ کیتھ عجیب مصرعہ چھہ؟
ادہ گینژ کہ ؟؟؟

یہ گژھہِ آسن
بے اختیار گونژھہِ کنی نیرتھ تبر گیم

 

 

 

 

مہجورنہِ نظمہِ "آزادی” متعلق

بٲتک ہند موضوع

کلیات مہجورس منز چھہ تسند اکھ مشہور بٲتھ درج۔ عنوان چھس "آزادی”۔ عنوانس تلہ کنہِ mahjoor

چھہ مۅٹین لفظن منز لیکھتھ "بوقت تقسیم ہند”۔

یہ چھہ سرونٹے اپر۔ بٲتک دۆیمے شعر چھہ یتھہ پاٹھۍ:

یہ آزادی گۅڈنۍ ییلہ درایہ نٔنۍ ہندوستانس منز
لچھو پاٹھۍ آیہ انسانن لداں تلہ کرایہ آزادی

یہ چھہ سیۆدےہاوان یہ چھہ نہ ہندوستان چہ آزادی متعلق بٲتھ۔ یہ چھہ کشیرِ ہنزِ "آزادی” متعلق۔ امہ آزادی برونہہ ٲس ہندوستانس منز آزادی آمژ۔ اتھ متعلق چھہ امین کامل اکس نوٹس منز لیکھان زِ "امہ نظمہ ہند تعلق چھہ نہ ہندوستان کس تقسیمس متلق بلکہ نیشنل کانفرنس کس اتھس منز اقتدار ینہ پتہ یس ظلم تہ ستم تہ بے راہ روی عوامس وچھنۍ پییہ، اتھ منز چھیہ تمچ ترجمانی۔ مگر مہجور اوس چالاک۔ اکہ طرفہ اوس عوامچ ترجمانی کران تہ دۆیمہ طرفہ اوس حکومت تہ لیڈرشپس تہِ ساتھ دوان، یمہ کنۍ امہ نظمہِ ہندۍ ٲخری ستھ شعر تمہ وقتہ شایع آیہ نہ کرنہ تکیازِ تمے ٲسۍ نشاندہی کران زِ نظم کر آیہ لیکھنہ۔”

محمد یوسف ثینگ چھہ نظمہِ پتہ کنہِ "(نامکمل نظم)” ردج کران یُس شاید مسودس منز آسہِ، البتہ چھہ بٔنم نوٹ لیکھتھ تم ستھ شعر تہِ درج کران یمن متعلق کامل سند نوٹ میہ پیٹھہ کنہِ درج کۆر۔

"یہ طنزیہ نظم سپز پننہِ وقتہ بڈہ مشہور۔ مہجور صٲبنہِ اتھ چھہِ اصل مسودس منز نۆم ستھ شعر تہِ یم تمہِ وقتہ مختلف وجہو کنۍ شایع ٲسۍ نہ کرنہ آمتۍ۔” (نوٹ، کلیات مہجور، صفحہ 326)

ثینگ چھہ نہ ونان تم مختلف وجہ کیا ٲسۍ۔ ممکن چھہ یہ ما آسہِ ہے مہجورنے پانے نوٹ لیۆکھمت زِ یم شعر آیہ نہ مختلف وجہو کنۍ شایع کرنہ۔ ٹینگن کۆر یہ پننہِ طرفہ پیش۔

____________

بٲتکۍ پاٹھ

یم ستھ شعر آیہ پتہ سون ادب 1963 منز شایع کرنہ۔ کینژن لفظن چھیہ سون ادب تہ کلیات مہجورس منز فرق۔

ستن جاین کژھن کٔرہس تلاشی تۅملہ مۅچھہ باپتھ
پھۆتین منز أنۍ تُلِتھ پُژِ ژھایہ آرم بایہ آزادی
(کلیات مہجور)

کژھن تامت ستے لٹہِ وارہ وچھہس تۅملہ مۅچھہ باپتھ
پھۆتِس کیتھ أنۍ تُلِتھ پُژِ ژھایہ آرم بایہ آزادی
(سون ادب 63)

نٔبر شیخ زانہِ کتھہِ ہند معنہِ تس ژلۍ خانہ دارنۍ ہیتھ
سہ گۆو فریادۍ پتۍ کنۍ لوکہ ہندِ تس پیایہ آزادی
(کلیات مہجور)

نٔبر شیخ زانہِ کتھہِ ہند معنہِ تس ژلۍ خانہ دارنۍ ہیتھ
سہ گۆو فریادۍ پتۍ کنۍ تس وۅپر گرِ پیایہ آزادی
(سون ادب 63)

امین کامل سند اکھ نوٹ چھہ زِ مہجورن اوس یہ پتم شعر تمس یتھہ پاٹھۍ بوزنومت:

نٔبر شیخس بچارس دۅہلہِ پھٔرۍ آزادیا میجکھ
دۅہن تارن دِتِن فریاد یۆت تاں پیایہ آزادی

یمن ستن شعرن ہند ٲخری شعر چھہ یتھہ پاٹھۍ:

یہ پولو گراونڈس منز ژایہ تتہِ بیٹھ شالہ گۅپھہِ اندر
توے شہرس اندر شامس کران وُنگرایہ آزادی

__________________

بٲتک زا سنہ

اتھ شعرس چھہ ٹینگ نوٹ لیکھان "اصل مسودس منز چھہ نہ تاریخ ردج”۔

سیتۍ چھس لیکھان ” مطلب ریڈیو کشیمر یتھ تمہِ وزِ پولوگراونڈس منز سٹوڈیو اوس۔” حالانکہ ٹینگ ہیکہِ ہے امہ پیٹھہ تہِ سنہ اندازہ کٔرتھ۔ ریڈیو سٹیشن لۆگ جولایی 1948 منز پولو گراونڈہ پروگرام نشر کرنہِ۔ کامل چھہ اکس جایہ اتھ نظمہِ متعلق لیکھان زِ "1949 منز بوزنووس بہ مہجورن، میٲنس شہرہ کس کرایہ مکانس منز، یُس بڈشاہ کدلس نش اوس۔ جون پیٹھہ اگستس تامک کس تام ریتھ اوس، مگر نظم ٲس میانہِ خیالہ تمہ برونہچ 47/48 ٹھچ۔”

عبدالغنی نمتہ ہالۍ چھہ پننس مضمون شیرازہ مہجور نمبر ستمبر دسمبر 87 اندر لیۆکھمت زِ یہ بٲتھ تہ لالو لالو دتۍ تمس مہجورن ییلہ سہ تمس سمکھنہِ گیاو کۅنگ پوش رسید بک ہیتھ۔ کۅنگ پوش کڈنک فیصلہ آیاو بقول کامل 49 اندر کرنہ، چناچہ تمیک گۅڈنیک شمارہ چھپیوو ستمبر 49 منز۔ امہِ حسابہ تہِ ٲس یہ نظم 49 برونہہ یا 48/49 درمیان لیکھنہ آمژ۔

مہجور سند اکھ بند

مہجور سند اکھ بند چھہ کلیات مہجورس منز یتھہ پاٹھۍ درج:

یمبر زلہِ برۍ برۍ تھاوۍ پیمانے
بومبرو سانہِ مہمانے روز
دیدن منز چھسے جاے شیرانے
بلبلہ سندۍ افسانے بوز

"مہمانے روز” لفظن چھہ ترتیب کار نوٹ لیکھان، یتھہ پاٹھۍ: "ابن مہجور سندِ وننہ کنۍ اوس مہجور صٲبن اتھ جایہ روز لفظ بدلہ بوز لیوکھمت۔ تہ تی چھہ وژنہ چہ کلہم قافیہ بندی ہند تقاضہ تہِ۔”

اتھ وژنس چھہِ دویمس دویمس مصرعس منز اتہِ نس وانے بوز، پانے بوز، ترانے بوز، بیانے بوز، دامانے بوز، دہانے بوز لفظ۔ صرف اتھ اکس جایہ کیازِ چھہ مہمانے بوز بدلہ مہمانے روز دنہ آمت۔ یہ چھہ نہ ترتیب کار ونان۔

یہ چھہ دراصل کمۍ تام چالاکن اتہِ بوز لفظکۍ ساری معنی ذہنس منز نہ آسنہ کنۍ لفظہ بدلی کرمژ۔ ترتیب کار سنز کٲم ٲس بٲتچ صحیح شکل محفوظ کرنچ، کِنہ مچھہِ پیٹھ مچھ مارنۍ۔ مہجورن چھہ صحیح لیوکھمت۔ مطلب چھہ "بومبرو بوز”۔ بوز گوو اکھ کنو بوزن، بیاکھ گوو کتھ ماننۍ۔ اتہِ نس چھہ بوز بنیادی طوردویمس معنی یس منز ورتاونہ آمت۔ صحیح مصرعہ گژھہ وژنہ کہ قافیہ نظامہ مطابق یتھہ پاٹھۍ آسن۔

بومبرو، سانہِ مہمانے، بوز

مہمان روزن چھہ نہ کانہہ معنی تھاوان۔ معشوق چھیہ امس پنن بناون یژھان، مہمان نہ۔ یعنی بومبر چھہ سون مہمان تہ امس چھہ درخواست کرنہ یوان زِ سہ بوزِ یمبرزلہِ ہنز کتھ۔ بوز گوو اتہِ نس وصل مراد، ٹھہرنک معنی تہِ چھہ تتھۍ منز۔ عشقس منز چھہ نہ مہمان بناون کانہہ معنی تھاوان بلکہ چھہ پنن بناون معنی تھاوان یعنی کتھ ماننۍ چھہ معنی تھاوان۔ کتھ ماننۍ چھہ ورگہ اظہار وصلک۔

اپزۍ تعریف بنہِ طنز

بہ کیازِ کرہ کٲنسہِ اپزۍ تعریف۔ کٲنسہِ ہنز حوصلہ افزایی چھیہ نہ اپزیو تعریفو سیتۍ کرنہ یوان۔ تعریف یتھ چیزس شبن تتھۍ چھہِ تعریف کرنہ یوان۔ اگر کانسہِ ہندس مجموعس منز اکوے غزل آسہِ تتھۍ ین تعریف کرنہ، اگر کٲنسہِ ہندس غزلس منز اکوے شعر آسہِ تتھۍ ین تعریف کرنہ۔ اگر کانسہِ ہندس شعرس منز اکوے مصرعہ آسہِ تتھۍ ین تعریف کرنہ، اگر کٲنسہِ ہندس مصرعس منز اکوے لفظ آسہِ تتھۍ ین تعریف کرنہ۔ غرض تعریفن ہند موقعہ تہ جواز چھہ ہمیشہ موجود آسان مگر تعریف شبن تتھۍ یہ تعریفس لایق آسہِ۔  حوصلہ افزایی گوو تمن چیزن ہنز نشاندہی یم تعریفن لایق آسن تہ یم نہ آسن تم نظر انداز کرنۍ۔

یوت تام نہ میہ کانہہ چیز بوزنہ آو، بہ لیکھہ نہ تتھ چیزس پیٹھ سنجیدگی سان (غیر سنجیدہ ژہین منز چھس بہ کینہہ تہِ لیکھان تہ یمن ہند تعداد چھہ ژور)۔ رسالن ہندین خطن منز چھہِ اکثر اپزۍ تعریف کرنہ یوان تکیازِ امچ چھیہ اکھ روایت قایم سپزمژ زِ ییلہ رسالس خط سوزو اکھ جملہ گژھہِ ایڈیٹر سندس تعریفس منز آسن، اکھ جملہ رسالہ کس گیٹ اپس تہ چھپایہ پیٹھ۔ اتی اگر وار آو تہ شمارس منز شامل ادیبن تہِ اکۍ سے شہس منز تعریف زِ یمن ہند کلام تہِ اوس جان۔ اسہِ سارنے چھہ پے زِ یم چھہ اپزۍ تعریف آسان تہ یم شبن اتۍ نے رسالہ کس خط و کتابت کالمس منزے۔ میون بلاگ چھہ نہ خط و کتابتک کالم۔ "نیب” رسالس منز تہِ ٲس میانۍ کوشش زِ بہ چھپاوکھ نہ یتھۍ خط، حالانکہ سۅ ٲس یمن ہنز جاے۔

پٔریو یہ اقتباس: "مہجور مٔرتھ دۅیہ ترہہ وہرۍ پتہ یۅسہ وۅنۍ کلچرل اکاڈمی ہندِ طرفہ ‘کلیات مہجور’ ناوچ کتاب میہ حال حالے وچھ تہ پٔر امچ ترتیب، تدوین، کتابت، رسم خط، تصویر، سرورق، کاغذ تہ چھپاے چھہ نہ صرف قابل دادے یوت بلکہ تحسینہ آفرینس لایق تہِ۔” یارہ بل (مضون)، رنجور کشیمری، شیرازہ، وری 22، شمارہ 4

یہ چھہ نہ رسالس خط سوزنہ آمت بلکہ محمد یوسف ٹینگس پیٹھ داہن صفحن ہند اکھ مضمون۔ اگر کٲنسہِ تعریفے آسن کرنۍ، وچھن چھہ آسان تعریف کتھ کرو۔ غلط چیزن ما کرو تعریف ییلہ زن تعریفن لایق کٲتیاہ چیز موجود آسن۔ رنجور کشیمری چھہ ژکہِ ٹینگ سندس اتھ کلیات مہجورس طنز کران باسان۔ اگر صحیح چیزس تعریف کرنہ بجایہ غلط چیزس تعریف کرو، سہ گژھہِ طنزس منز تبدیل۔

mahjoor

میہ چھہ یہ افسوس سان ونن پیوان زِ ‘کلیات مہجور’ چھہ اکھ سیٹھا وسۍ پایہ پیش کش۔ امچ چھپاے چھیہ نہ کنہ تہِ معیارہ معمولی ہیور، امہ کھوتہ بہتر چھپاے چھیہ اکاڈمی ہنزن امہ برونہہ شایع کرنہ آمژن کتابن سپزمژ۔ امیک کاغذ چھہ سیٹھا ردی، سیٹھا معمولی درجک۔ اتہِ نس تہِ کرو امہ برونہہ چھپاونہ آمژن اکاڈمی ہنزن کتابن سیتۍ موازنہ۔ تصویرس کیا تعریف چھہِ، تہِ آو نہ میہ سمجھ۔ رسم خط چھہ سے یُس امہ وقتہ چین اکاڈمی ہنزن کتابن چھہ۔ رسم خطس تہ کلیات مہجور کین تعریفن کیا تعلق چھہ، تہِ تور نہ میہ فکرِ۔ شاید چھہ رسم خط نش رنجور کشیمری سند مراد املا۔ املاہکۍ کھرۍ چھہ تتھے پاٹھۍ اتھ کتابہِ منز تہِ موجود۔ سے املا یس امہ ساعتہ اکاڈمی ہنزن کتابن منز اوس آسان۔ کتابتس کیا تعریف چھہِ؟ یۅہے کٲتب چھہ اکاڈمی ہنزن باقی کتابن تہِ کتابت کران۔ بلکہ چِھن گۅڈنکین نثری صفحن لفظ اکھ اکس سیتۍ ژیلتھ لیکھمتۍ۔ کتابت چہ ییژاہ غلطی اتھ کتابہِ منز میہ نظرِ گیہ تیژاہ غلطی چھیہ نہ میہ کنہِ کتابہِ منز نظرِ گمژہ۔ نثر تھٲوۍ تو الگ (تتہِ چھہ نہ شمارے)، مہجورنس کلامس منز چھہِ صفحہ پتہ صفحہ پروف ریڈنگ نہ سپدنہ کنۍ لفظ غلط چھپیمتۍ۔ یہ چھیہ افسوسچ کتھ۔ ترتیب کارن چھہ نہ پانہ امیک پروف پرنک کانہہ تکلیف کورمت۔ بلکہ چھہ باسان زِ صحب آسنہ کنۍ چھین سٲرے کٲم پننین ماتحتن پیٹھ تراومژ۔ جایہ جایہ چھہ فٹ نوٹ غلط چھپیمتۍ۔ پرن وٲلس چھہ تمن پیٹھ پانہ ریسرچ کرن پیوان۔ (یم کتھہ ونہ سے یمۍ کلیات مہجور پورمت آسہِ، صرف وچھمت آسہِ نہ۔) کلیات مہجور چھہ نہ پیٹھمین تمام چیزن ہندِ تعلقہ کنہِ حسابہ تعریفن لایق۔ یہ چھیہ تژھے یژھ اکھ بیاکھ کتاب چھیہ۔ یمن چیزن شوبہ ہن تعریف تیلہ ییلہ یم امہ وقتہ چین عام کتابن ہندِ معیارہ ہیور آسہ ہن۔ تعجب چھہ کتابت، کاغذ، چھپایہ ہند ذکر چھہ کرنہ آمت، باینڈنگہ ہند چھہ نہ ناو تہِ ہینہ آمت۔ ییلہ زن تمیک حال تہِ لایق تعریف چھہِ۔ کلیاتک یہ حال برونہہ کنہِ ٲستھ چھہ صاف ننان زِ رنجور کشیمری چھہ تعریف بدلہ طنز کران۔ کتابت، کاغذ، چھپایہ ہندین تعریفن منز چھہ نہ رنجور کشمیری دادے یوت دوان بلکہ چھہ یمن چیزن لایق تحسین تہ آفرین زانان مگر یہ داد تہ تحسین تہ آفرین کس؟ امہ کھوتہ بوڈ طنز کیا گژھہِ آسن۔

رنجور کشمیری تہ کلیات مہجورک ذکر آو منزے۔ ونن اوسم بہ چھس نہ یتھہ پاٹھۍ تعریف کران یُس طنز بنہِ۔ میہ چھیہ نہ اپزۍ تعریف کرنس منز کانہہ دلچسپی۔

ٲخرس پیٹھ رنجور کشمیری سندۍ یم شعر:

ییتہِ روح ضمیر آزاد
آسن خیال آزاد
ییتہ سارنے کُنے واد
سٲری دوان پٔزس داد
اپزس نہ ییتہ چھپن جاے
تتہِ میانہِ کشیرِ دتہ جاے

مہجور سندس مقبرس پیٹھ زہ نظمہ

مہجور سندس مقبرس پیٹھ وننہ آمژہ رحمن راہی تہ غلام نبی خیال سنزہ نظمہ چھیہ میہ برونہہ کنہِ۔ راہی سنز نظم "کنۍ کتھ” تہ خیال سنز نظم "مہجورن مزار”۔ فرق چھیہ یہ زِ خیال چھہ پننہِ نظمہِ منز مہجور سنز ویران قبرہ ہنز حالت وچھتھ پننۍ نظم ونان تہ راہی چھہ مہجور سنز قبر شیرنہ چہ تقریبہِ منز شریک سپدتھ پننۍ نظم ونان۔ مختلف موقعہ ٲستھ تہِ چھہ یمن منز واریاہ ہشر۔ ممکن چھہ اکھ آسہِ بیاکھ ذہنس منز تھٲوتھ وننہ آمژ، کۅس نظم آیہ گۅڈہ تمیک فصیلہ کرن کاشرِ ادبکۍ تواریخ دان (اگر چھہ کانہہ، ٹڈ گرۍ چھہ واریاہ) مگر سۅ کتھ چھیہ نہ تیژ اہم تہِ۔

راہی سنز نظم چھیہ اکھ "نثری”، صحافتی تہ عمومی بیان یُس موزون تہ قافیہ بند کرنہ آمت چھہ۔ یہ چھیہ نہ کنہِ صورژ منز نظم بنان۔ اتھ نظمہ منز وننہ آمژ کتھ چھیہ نہ موزون کلام بننس لایق تہِ۔ میہ چھہ تعجب راہی ین کیا سوچتھ چھیہ یہ موزون کلامی کرمژ؟ 50 پیٹھۍ شعرن منز چھہ اکھ سیٹھا معمولی تہ سطحی کتھ وننہ آمژ یمہ خاطرہ اکھ نثری نوٹ یا رائٹ اپ موزون روزہا۔ موزونے اوت نہ بلکہ کارگر تہِ۔ تمام شعر چھہ سیٹھا سطحی زبان تہ خیالن ہند ورتاو۔ مثلا

ہے بایو کتھ بوزو سا
بانبر کیا چھو روزو سا

بہ تہِ چھس آمت سالے یور
مجلس موکلہِ تہ تراوو دور

تلہ سا بوزو کیا چھہ ونان
لاوڈ سپیکر مۅختہ چھکان

اتھ نظمہ مقابلہ چھیہ خیال سنز نظم تتھ منز پیش کرنہ آمژِ کتھہِ ہندِ حسنہ کنۍ شعری حسن تہِ پیدہ کران۔ خیال سنز نظم چھیہ راہی سندین 50 ہن شعرن مقابلہ 5 ژن شعرن ہنز نظم یۅس اکس سیٹھا فکر انگیز نوٹس پیٹھ ختم چھیہ گژھان:

مشکہ نٲوتھ پانہ گل یمہِ پننہ گلزارکۍ دۅہے
ترووہکھ سرِ راہ کاشرۍ ٲسۍ پردارکۍ دۅہے

نہ صرف چھیہ ظاہری شکلہِ منز خیال سنز نظم ارتکاز پیش کران بلکہ چھیہ تمۍ سنزِ کتھہِ منز تہِ احساس تہ کیفیت کہ لحاظہ اثرانگیزی۔

نظمن ہند ہشر چھہ یتھ کتھہِ منز تہِ زِ ییتہ مہجور سنز قبر وچھتھ خیالس مغلن ہنزِ ملکہ نور جہانس کن منسوب فارسی شعر یاد پیوان چھہ، راہی یس چھہ نند ریوش سند اکھ مصرعہ یاد پیوان۔ دۅشونی نظمن منز مشہور شعر یاد کٔرتھ تمن ہندِ ذریعہ پننہِ کتھہِ ڈۅکھ دین چھہ اہم۔

راہی سنز نظم چھیہ اکھ منافقانہ سیاسی نظم یمیک ادبی مۅل شک آور چھہ ییلہ زن خیال سنزِ نظمہِ منز جذبچ نفاست موجود چھیہ۔

ممکن چھہ میانہِ یمہ نوٹہ کہ بہانہ پرن دوس یمن دۅن شاعرن ہنزہ یم نظمہ۔

غزل کنہ وژن؟

mahjoor

نیب 21 منز تُل رفیق رازن مہجور سندِ اکہِ غزلہ کس وزنس متعلق سوال۔ غزل چھہ کلیاتس منز یتھہ پاٹھۍ درج:

للونۍ میہ چھم چانۍ لولہ چھۅکھ مۅکھ ہاوتو مارہ متیو
ینہ چانہِ ژلنم غم تہ دۅکھ رۅخ ہاوتو مارہ متیو
دل میون گۅڈہ برمرووتھن پتہ کیازِ داوس لوگتھن
دعدہ آدنکۍ لولکۍ سخن یاد پاوتو مارہ متیو
درایہ سازہ منزہ آوازِ ناز بوزتھ پتھر پییہ عشقہ باز
بے جان امہِ سازک یہ راز ننۍ راوتو مارہ متیو
چون رنگ و روپ چون خط و خال ڈیشتھ ژلاں غم تے ملال
ظلمکۍ تہ ستمن ہندۍ خیال مشراوتو مارہ متیو
ییلہ مس چھہِ چاوان عاشقس پر تہ پان ہوے باسان تس
ژہ تہِ پننہ اتھہ ستۍ لولہ مس میہ تہِ چاوتو مارہ متیو
دل میون لولہ نارس اندر یژ صاف گوو زٲلتھ کھۅچر
وۅنۍ لولہ بازارس اندر مۅلناوتو مارہ متیو
چھکھ زندگی بخشاں کمن یہ تہِ تازہ کرتن میون من
بے حیس گومت شونگمت چمن وزناوتو مارہ متیو
ییلہ عقلہِ کور لولس جواب ووتھ شور عالم گوو خراب
وزناوۍ متہِ فتنک یہ خواب بییہ ساوتو مارہ متیو
پوشہ نولہ سندین آلون گل پانہ گلۍ چھِکھ آلون
مہجور سنزہ کتھہ کیا لوَن پرکھاوتو مارہ متیو

راز چھہ ونان زِ مہجورن یتھ وزنس پیٹھ یہ غزل وونمت چھہ، یہ چھہ نہ تتھ پیٹھ پورہ وتران۔ ٲخرس پیٹھ چھہ راز امہِ غزلہ کس قافیس پیٹھ تہِ اعتراض کران ۔ ونان چھہ: "مطلع تل چھہ صاف ننان زِ غزلک قافیہ چھہ (رۅخ) (مۅکھ) بیترِ تہ ردیف (ہاوتو مارہ متیو) مقرر کرنہ آمت۔مگر امچ پابندی چھیہ نہ مطلع ورٲے کنہِ تہِ شعرس منز نباونہ آمژ۔”

بہ کرہ راز نین دۅشونی نکتن پیٹھ کتھ۔گۅڈہ تلون قافیچ کتھ۔

سانۍ وژن لیکھن والۍ شاعر ٲسۍ پننس کلامس غزلے ونان۔ امیک ثبوت چھہِ تم قلمی نسخہ یمن منز وژنن پیٹھ تہِ غزل عنوان چھہ دتھ۔ امہ علاوہ ٲسۍ سٲنۍ شاعر پانس غزل خوانے ونان۔ مثلا وچھوکھ یم شعر:

حاجنک اسد غزل خانے    صاحب دل نے ونانے
تمۍ پان زولے اتھ عشقہ نارس   سلورِ منز لارس تہ لولو
(اسد پرے)

رازہ ہونزے فیض ازالی چھہ تو  وازہ محمود کیا یہ غزل خانہ سون
(وازہ محمود)

باہوشن چھس باواں سیر   بے ہوشن دواں الماس تیر
وون احد زرگرن غزل رنگمار   کافر سپدتھ کورم اقرار
(احد زرگر)

احد زرگر زاگہِ شلس   لاگہِ غزل خان
باغ رضوانہ حورہ ولس   سے میہ دلس کان
(احد زرگر)

چیتہ محمود مستانے   برۍ برۍ پیالہ موے
ازلی چھکھ غزل خوانے مہ کر دیوانگی یے
(محمود گامی)

یم ساری مصرعہ چھہِ وژنن ہندۍ ۔

لل دیدِ ہند "واکھ تہ وژن” مصرعہ الگ ترٲوتھ چھہ یہ تحقیق کرنک ضرورت زِ وژنس وژن کرہ پیٹھہ تہ کتھہ پاٹھۍ گوو شروع۔ کلیات مہجورس منز چھہ صفحہ 207 پیٹھ اکس وژنس متعلق نوٹ زِ مہجورن چھہ تتھ پننہِ اتھہ تلہ کنہِ یتھہ پاٹھۍ تاریخ درج کورمت۔ ” 2 ہار 98 بکرمی کو غزل شروع ہوکر7 ہار 98 بکرمی کو ختم ہوئی۔” گویا مہجور تہِ چھہ پننین وژنن غزلے ونان اوسمت۔ ابن مہجور تہِ چھہ اتھۍ صفحس پیٹھ بییس نوٹس منز وژنس غزلے ونان۔ مہجور سند پیٹھم غزل تہِ چھہ فارمہِ کنۍ ژکہِ وژن۔ کلیات مہجورس منز چھیہ اتھ غزلہ کس صورتس منز کتابت کرناونہ آمژ، یمہِ کنۍ اتھ پیٹھ پرن والین غزلک دھوکہ لگان چھہ تہ رفیق رازن تہِ چھہ نہ امہِ کس فارمس کن زیادہ ظۅن دیتمت۔ بہ کرن یہ وژنہ چہ شکلہِ منز بۅنہ کنہِ پیش۔

للونۍ میہ چھم چانۍ لولہ چھۅکھ   مۅکھ ہاوتو مارہ متیو
ینہ چانہِ ژلنم غم تہ دۅکھ   رۅخ ہاوتو مارہ متیو

دل میون گۅڈہ برمرووتھن   پتہ کیازِ داوس لوگتھن
دعدہ آدنکۍ لولکۍ سخن   یاد پاوتو مارہ متیو

درایہ سازہ منزہ آوازِ ناز   بوزتھ پتھر پییہ عشقہ باز
بے جان امہِ سازک یہ راز   ننۍ راوتو مارہ متیو

چون رنگ و روپ چون خط و خال   ڈیشتھ ژلاں غم تے ملال
ظلمکۍ تہ ستمن ہندۍ خیال   مشراوتو مارہ متیو

ییلہ مس چھہِ چاوان عاشقس   پر تہ پان ہوے باسان تس
ژہ تہِ پننہ اتھہ ستۍ لولہ مس   میہ تہِ چاوتو مارہ متیو

دل میون لولہ نارس اندر   یژ صاف گوو زٲلتھ کھۅچر
وۅنۍ لولہ بازارس اندر   مۅلناوتو مارہ متیو

چھکھ زندگی بخشاں کمن   یہ تہِ تازہ کرتن میون من
بے حیس گومت شونگمت چمن   وزناوتو مارہ متیو

ییلہ عقلہِ کور لولس جواب   ووتھ شور عالم گوو خراب
وزناوۍ متہِ فتنک یہ خواب   بییہ ساوتو مارہ متیو

پوشہ نولہ سندین آلون   گل پانہ گلۍ چھِکھ آلون
مہجور سنزہ کتھہ کیا لوَن   پرکھاوتو مارہ متیو

امچ وژنہ ہیت درایہ وۅنۍ صاف ننۍ ۔ پریتھ بندس منز چھہِ تریہ ہم قافیہ مصرعہ یس زن وژنہ کہ اکہ ہیتک معمول چھہ۔ ژورم مصرعہ چھہ ووج۔ عام طور چھہ وژنن منز ہیرہ بۅن ہوُے ووج آسان مگر
کینژن وژنن منز چھہِ حبہ خاتونہِ سندِ پیٹھے متنوع ووج تہِ میلان۔ مثلا یمن وژنن ہندۍ ووج:

وارۍ وین ستۍ وارہ چھس نو
ہنہِ لو ہنہِ لو ہنہِ لو
بو وِلہ ونے یارہ تے

زیر مطالعہ وژنہ چہ مخصوص فارمہِ منز چھہِ مہجورنۍ بییہِ تہِ کینہہ بٲتھ یمن منز بنم مشہور بٲتھ تہِ چھہ۔
ویسۍ یے سہ میون دلبر   شیریں کلام ییہ کر
یس کن وچھتھ ژلاں شر   سے گل اندام ییہ کر

ییہ نا سہ یار میونے   ژلہِ ہے میہ زونہِ گرونے
وندس قبیلہ کرونے   روزس غلام ییہ کر

یہ بٲتھ چھ وژنہ چہ چالہِ کلیات کس صفحہ 118 پیٹھ درج۔ وۅنۍ زن لیکھون یہ غزلہ چالہِ:
ویسۍ یے سہ میون دلبر شیریں کلام ییہ کر
یس کن وچھتھ ژلاں شر سے گل اندام ییہ کر
ییہ نا سہ یار میونے ژلہِ ہے میہ زونہِ گرونے
وندس قبیلہ کرونے روزس غلام ییہ کر

کانہہ وژن خالص غزلہ چالہِ لیکھنہ سیتۍ ما بنہِ سہ غزل؟ یتھے پاٹھۍ وچھون مہجور سند یہ مشہور بٲتھ تہِ کلیات کس صفجہ 127 پیٹھ۔
باغ نشاط کے گلو   ناز کران کران وۅلو
خندہ کراں کراں وۅلو   مختہ ہراں ہراں وۅلو

امی چالہِ چھہِ اسہِ نش محود گامی تہ رسول میرنۍ تہِ کٔژ وژن۔ یمن منز یم مشہور بٲتھ تہِ چھہِ:
کیا جان چھی شوبانے پرنور زہ دردانے
(محمود)
سوز دلک بہ کیا ونے روز دما بوز کنے
(محمود)
یارہ لوگتھ سنگ دل چانہ چھم جانک قسم
(رسول)
زلف زنجیر یارس ونس بو زار کوت گوم
(رسول)
جب آیا تو نے گھبرایا ہمار من الا جانو
(رسول)
یارہ رۅے ہاوتم برقہ تلی محرابے بمن لگیو
(رسول)

یمن منزتہِ چھہِ رسول میرنین ترین وژنن ہندۍ بند غزلکۍ پاٹھۍ شعر بنٲوتھ کتابت کرناونہ آمتۍ ۔ شاید آسن یم یتھے پاٹھۍ مسودن منز تہِ۔

جب آیا وژنہ کس مطلعس چھیہ سۅے بٲش یۅس مہجورنس سندس مطلعس چھیہ، یتھ پیٹھ رفیق رازن اعتراض چھہ کورمت۔
جب آیا تو نے گھبرایا ہمارا من الا جانو
دیا دل تو پراے ساتھ رلایی تن الا جانو

یہ مطلع وچھتھ تہِ چھہ باسان زِ اتھ منز آسہِ تن، من، بیترِ قافیہ تہ الا جانو ردیف۔ مگر ییلہِ اسۍ امہِ بٲتکۍ باقی شعر وچھان چھہِ اکھ چھہ یہ ننان زِ یہ چھہ نہ غزل بلکہ وژن تہ بییہ یہِ زِ تن، من چھہ نہ امیک قافیہ۔ حقیقت چھیہ یہ زِ غزلک فارم چھہ غزلس نزدیک (1) یمہ کنۍ سانین وژن شاعرن گڑبڑ اوس گژھان۔ تمن چھیہ نہ صنفی (ہیتی) امتیازن منز شاید تمہ رنگہ دلچسپی ٲسمژ یمہ رنگہ اسہِ چھیہ۔

ممکن چھہ یمن بٲتن منز ما آسہِ ہے یمو شاعرو شعوری یا غیر شعوری طور غزل وننک شروعات کورمت مگر وژن وننکۍ عادتن چھہِ مطلع پتہ باقی بٲتھ وژنہ چہ فارمہِ کن پھرۍ متۍ۔ کنہِ ساتہ چھہ یہ ونن مشکل گژھان زِ بٲتس ونوا وژُن کنہ غزل۔ مگر محض غزلکۍ پاٹھۍ وژنکۍ بند لیکھنہ ستۍ بنن نہ یم بٲتھ غزل۔ یتھے پاٹھۍ ہیکہِ نہ محض یہ کتھ کنہِ وژنس غزل بنٲوتھ زِ تتھ منز چھہ فارسی وزن ورتاونہ آمت۔ محمود گامی تہ رسول میرن چھہِ وژنہ ہا فارسی وزنن پیٹھ ونۍ متۍ۔

رفیق رازن قافیس پیٹھ اعتراض چھہ غزلہ کس حدس تام صحیح مگر چونکہ مہجورن زیر مطالعہ بٲتھ چھہ نہ غزل، لہذا چھہ یہ اعتراض پانے زایل گژھان۔کیا محمود گامی، کیا رسول میر، کیا عبدالاحد آزاد تہ کیا غلام احمد مہجور یم شاعر چھہِ ژکہِ وژن شاعر ٲسۍ متـۍ۔

رفیق رازُن بیاکھ سوال یس تمۍ امہِ کس وزنس متعلق تلمت چھہ۔ (تتھ پیٹھ کرو دوبارہ کتھ۔)

(1)
ہوئے مر کے ہم جو رسوا   ہوئے کیوں نہ غرق دریا
نہ کبھی جنازہ اٹھتا   نہ کہیں مزار ہوتا

جب وہ جمال دل فروز   صورت مہر نیم روز
آپ ہی ہو نظارہ سوز   پردے میں نہ چھپائے کیوں

یتھۍ ہوۍ غزل آسہ ہن سانین شاعرن وارہ کارہ وژن باسان۔