کاشر ادب – اکھ بہترین رسالہ (قسط 5)


ka

1976 منز درایہ کاشر ادب رسالس بییہ زہ شمارہ (ستمبر تہ اکتوبر)۔ امچ کٲم ٲس وۅنۍ اوتار کرشن، چمن لال چمن تہ سجود سیلانی یس مٹہِ۔

خصوصیت چھیہ یہ زِ یمن دۅشونی شمارن منز چھہ لل واکھن پیٹھ سنتوش سند مخصوص تبصرہ چھپان۔ یمن دۅشونی منز چھہ علی محمد لون سند پنڈت سوم ناتھ دیو سنزِ سلسلہ وار کتھہِ ویتال پچیسی یک ترجمہ چھپان (زہ قسط)۔ یمن دۅشونی منز چھہ سنتوش سند بحر طویل /د/ تہ /ھ/ حرف چھپان۔ یمن شمارن منز چھہ "آرت "ناوہ اکھ سلسلہ یتھ تحت بزرگ ادیب سند غزل، نظم یا افسانہ چھپان چھہ تمن سیتۍ تہنز تمہید۔ اتھ سلسلس تحت چھہِ کامل، نادم، بھارتی تہ اختر چھپان۔ یمو منزہ چھہِ کینہہ دلچسپ جملہ پیش:

"یہ کلہ دود ہیوٚت نہ میہ زانہہ تہِ زِ یم غزل چھا برمراہ چوکن ہندۍ ٲلۍ کنہ پاسکدرن ہندۍ ماٹھ۔ یم پٔرتھ چھا کانسہِ پٲنتھن گژھان کنہ پرکژ اژان۔” (کامل)

"یتھ گرِ بہ چھس سۅ چھیہ تمہِ گرِ ہند حصہ یۅسہ ٲس تہ یۅسہ گٔر نہ میانۍ آسہِ سۅ تہِ آسہِ تمہِ گرِ ہند حصہ یتھ گرِ بہ چھس۔” (بھارتی)

"میہ چھہ باسان لفظ چھہ مورت تہِ صدا تہِ۔ تہ خیالن ہند سوٚن وۅگن تہِ۔ امہ علاوہ چھہ لفظ انسانی کلچرچ اژھینۍ تواریخ تہِ۔” (نادم)

"شرۍ سند نویر تہ بالغ سند سلیقہ رٔلتھ چھہ اکھ نیرل نویر پریتھان۔ امۍ سے زٲژ چھہِ ادیب، شاعر، موسیقار، آرٹسٹ، فنکار ونان۔” (اختر)

"آرت” خصوصی پیش کشس تحت چھہِ کامل سندۍ زہ غزل چھپان (سمے صدا چھہ ژہان سنگرن جگر کس پتھ/لکھ چھہِ پھیران عجیب باوتھ ہیتھ)، بھارتی سند افسانہ "وقتہ کس چوکھاٹس منز”، نادم سنزہ نظمہ "زتنہِ” ناوہ 7 لۅکچہ نظمہ تہ اختر سند افسانہ "کوہ قاف تہ سیکہِ ڈیر”۔

یمو علاوہ چھہِ کامل سندۍ "موسیقی” ناوہ تریہ وژن بٲتھ چھپان۔ سنتوش سند اکھ 46 شعرن ہند ژھۅٹہِ وزنک زیوٹھ غزل چھپان یمیک مقطع چھہ:
گگرِ کن زیٹھیۍ غزل/ کاملو مۅکلاو با

نادم سنز اکھ نظم "مرلی” ناوہ ، رحمن راہی سنز "آورن”، چمن لال چمن سنز "وینتی”تہِ چھیہ یمن شمارن منز چھپان۔ رفیق راز سند غزل (آفتابچ سۅ رہج شے تہِ ژھیون واجنۍ ٲس) تہِ چھہ چھپان۔ میانۍ اکھ مختصر نظم تہِ۔

اکھ نظم
بہ اوسس سوچان
تہ سہ اوس مۅکلیومت سوچتھ
تس ٲس میہ کن تھر
تہ میہ اوس تس کن بُتھ
خبر تس کس کن اوس بُتھ
کنہ تس اوسے نہ بُتھ

بکواس کشیمری سند "سفر در شہر بیہ بوج” چھہ دۅن قسطن منز چھپان۔ یہ چھہ پرنس لایق۔ بکواس کشیمری یم خط نیب رسالس تہِ لیکھان اوس تم چھہِ مزاحیہ ادبکۍ جان نمونہ۔ ضرورت چھیہ تم یِن جمع کرنہ تہ کتابی صورتس منز چھاپنہ۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s