غنی بساطین ٹرانزسٹر

 

 

منیب الرحمن

 

دپہر وقتس فلمی بٲتھ
شامس شامس بی بی سی
بٹہ وارِ آتھوارِ کرکٹ میچ

مشین تہِ لٲجن
بی بی سی پیٹھہ آے نہ  خبرے
محمد رفیع سنز دل بہلایی
کشور کمارنِس شورس تل
محمد حنیف تہِ کورہس ڈک
ژُچن چھکن پیٹھ ولمنہِ کھسوُن
کوتاہ ژالہِ

وتہِ پیٹھ کۆڈنس ٹاس

بساطۍ وانک کل سرمایہ
ٹرانزسٹر
 

دیوارس پییہ ژھاے

 

منیب الرحمن

 

تکیس ڈوکھ دتھ کوب ژامت
ہوا چھہ چٹہ کھٲلتھ  ڈولان
چاے چھیہ کھوند کھیتھ وسۍ پیمژ
ویتہ گٲمژ کانگر لوب کن
جاے چھیہ بیہنہ کہ آیہ ورٲے

موج یتُھے اژِ کمرس منز
دیوارس پییہ ژھاے
تکیس گژھہِ ژس
ویتہ گٲمژِ کانگرِ لگہِ پھیُر
پتھرس کھسہِ قدمن ہند بوش
ہوا نوا ڈلہِ

"چاے ہا چھو وسۍ پیمژ!”

 

 

 

 

ہے گۅسوانۍ تیمبری

 

منیب الرحمن

دوپمس دٔدۍ متہِ سینہ
ہتا میانہِ کینہ
شورس  سیتۍ مہ گند
پانس سیتۍ کرہکھ خبر کٲتیا
بھسم

دوپنم  بہ چھس گاش زالان
نورک آگر

ہے میانہِ نورٲنۍ انہِ گٹہِ
گاش ژھورتھ نہ زانہہ تہِ
گاشہ نیبر

یہ شورہ مشک ٲسکھہ
سبز کلین تلہ کنہِ
گننین جنگلن منز کھٹان
یہ مشک ووت
شہرن تام

ہے میانہِ تنبلیمژِ مژی
چانۍ ترشولن ہے والۍ
میٲنس اسمانس چھولۍ

گۆو ہے
گۆو ہے رتہ زول

ہے گۅسوانۍ تیمبری
متھ پانس سور
تہ بیہہ دم کٔرتھ

 

 

 

 

نیول رنگ

بیاکھ چیز لۆب۔ اکہ وقتہ اوسس بہ ہندی شاعری تہِ کران۔ تۅہہ چھیہ پتاہ ہندی شاعری چھہ الگے انداز۔ کینہہ نظمہ آیہ کاغذ ژھانڈان ژھانڈان اتھہ۔ اکھ نظما کرون ییتہ نس درج۔

नीला रंग

 

मेरी आँखें

तारों के झुरमुट में

खो जती हैं

तारों के पीछे गहरे

अनदेखे सोच में

डूब चली जाती हैं

इतने में

तारों का झुरमुट

आंखों में डूबके

खो जाता है

आसमान में

बस नीला रंग

रह जाता है

(ترجمہ:

نیول رنگ

میانہِ اچھن چھیہ
تارکن ہندس جھرمٹس منز
راوان

تارکن پتہ کنہِ
سرنس اوچھ سوچس منز چھیہ
ڈوبان روزان)

اتی چھہ
تارکن ہند جھرمٹ اچھن منز
ڈوبتھ راوان

آسمانس منز چھہ
صرف نیول رنگ
روزان

پانژھ رستم، پانژھ دریاو

نوٹ: از لٔب میہ اکس کاغذس پتہ کنہِ اکھ نظم۔ بہ اوسس ژھانڈان میہ ما آسہِ علامتس متعلق کانہہ مضمون کنُہِ ساتہ رژھروومت۔ یہ چھیم نہ پتاہ یہ کر میہ لیچھمژ۔ چونکہ یہ چھیہ پنسل سیتۍ میانی اتھ لیکھتھ، لہذا آسہ میٲنی نظم۔ دچھنہ طرفہ چھس لیکھتھ: کامل، نادم، راہی، اختر، لون۔ یہ چھم نہ پتاہ نظمہِ ہندۍ بند چھا امی ترتیبہ لیکھنہ آمتۍ کنہ نہ۔ میہ چھہ نہ یادے۔ بییس جایہ چھہِ نظمہ ہندۍ گۅڈنکۍ تریہ بند لیکھتھ نثرکۍ پاٹھی یکجا، سیتی چھس حاشیس منز راہی، کامل، نادم لیکھتھ۔ بہرحال میہ دۆپ کھالون بلاگس۔ یژھہ چھیہ خبر کٲژا نظمہ تہ غزلہ راو‏مژہ۔ میہ اوس نہ زنہے پننۍ چیز رژھراونس یا شایع کرناونس سیتۍ دلچسپی۔ نظم پٔرتھ ترِ تۅہہ فکرِ کیازِ نہ۔ فٲترگیا ہۅ تہِ تہ فٲترگیا یہ تہِ۔

کٲنسہِ ما تگہِ  پانژن رستمن سیتۍ نظمہِ ہندۍ بند رلاونۍ؟

پانژھ رستم، پانژھ دریاو

اکھ رستم
پننس دریاوس
پشجین ملرین رکنہِ وسان

بیاکھ خبر کیا لاس لٔبتھ
ڈنگ دتھ بیوٹھ
حبابس منز

بیاکھ چھہ وۅگنین جاین وٲتتھ
کرنجلیو کرنجلیو
ساراں آب

بییس چھہ پۆس کھۆتمت
واوہ طفانس
آب مندان

بیاکھ چھہ پننس دریاوس
پننی گتھہِ منز
ییرہ گۆمت

اکھ کتھ باتھ ترجمس متعلق

trans

راتھ سپز اچانک نہج رسالہ کس وٹس ایپ گروپس منز ترجمہ کاری ہنزِ ضرورژ متعلق اکھ کتھ باتھ، یتھ منز میہ پننۍ خیالات پیش کرنک موقعہ میول۔ میہ دۆپ بہ کرکھ یم خیالات ییتہ نس مختصرا محفوظ:

میانہ نظرِ منز چھہِ ترجمکۍ زہ مقصد۔ اکھ گۆو ہیچھنک مقصد۔ یعنی ترجمہ کرنہ سیتۍ چھہ ترجمہ نگارس فایدہ میلان۔ سہ چھہ نوین نوین خیالاتن، تصوراتن، موضوعاتن، طریق اظہارن انزۍ منزۍ گژھان تہ تم کاشرس منز پھرنک تہ دوبارہ بیان کرنک ہنر ہیچھان۔ یمہ ساتہ اسۍ کانہہ فن پارہ کنہ زبانۍ منز پران چھِن، اسۍ چھِن سہ اکس سطحس پیٹھ سمجھان مگر ییلہ اسۍ اتھ ترجمہ کران چھہِ اسۍ چھہِ تقریبا سہ فن پارہ تخلیق کرنہ چہ عملہِ برابر کامہِ منز شریک سپدان۔ یۆہے چھہ امیک تربیتی پہلو۔ میانہِ خیالہ چھیہ سانہِ خاطرہ ترجمہ نگاری ہنز ضرورت امی پہلو کہ لحاظہ۔

ترجمک بیاکھ مقصد چھہ بییہ زبانۍ ہند یا بییہ کُنہِ فن پارک تجریہ پننین پرن والین دستیاب تھاوُن۔ امچ چھیہ نہ امہ کنۍ زیادہ ضرورت تکیازِ یمو زبانو پیٹھہ اسۍ ترجمہ کرتھ ہیکو یا اسۍ کران چھہِ تم زبانہ چھہِ اسۍ مہارت سان زانان۔ اسۍ ہیکوکھ تم فن پارہ اردو پاٹھۍ یا انگریزۍ پاٹھۍ پننس اصلس منزے پرتھ، ترجمچ چھیہ نہ کانہہ ضرروت۔ یمن ہند ترجمہ چھہ کار فضول، خاص ییلہ اسۍ کاشرِ کہ کھوتہ زیادہ بہتر پاٹھۍ یمے زبانہ پران چھہِ۔ اگر کنہِ تژھہِ زبانۍ یا کُنہِ تتھس چیزس ترجمہ کرنہ ییہ یُس نہ عام کاشرس ادیبس یا پرن والین دستیاب آسہِ، سۅ چھیہ بدل کتھ۔

ترجمہ کار سندِ خاطرہ چھہ دویمہِ زبانۍ ہندِ ادبک متواتر مطالعہ ضروری، تیلی ہیکہِ سہ تم چیز لٔبتھ یم ترجمس لایق آسن۔ ترجمہ کار کرِ تیلی ترجمہ ییلہ تس کُنہِ چیزس سیتۍ کانہہ ہشر پیدہ گژھہِ، موضوع، فن، تصورات، طرز اظہار بیتر کہ لحاظہ۔ ہنگتہ منگہ کُنہِ چیزس تھپھ دنۍ تہ ترجمہ کرن چھہ فضول۔ ترجمو سیتۍ چھہ نہ کُنہِ زبانۍ برژر گژھان۔ برژرک تصورے چھہ غلط۔  اتھ چھہِ زے مقصد یم میہ پیٹھہ کنہِ بیان کرۍ۔۔

فن ورتاونک طریقہ ہیچھنہ کہ تصورہ کنۍ چھیہ اسہِ ساروے کھوتہ زیادہ افسانہ چہ ترجمہ کاری ہنز ضرورت۔ یا کنہ حدس تام تصوراتی تنقیدی مضمونن ہنز۔