نیرۍ پوشک نۆو شمارہ

کینژھا صحتہ چہ خرابی تہ کینژھا معاشی پریشانیو کنۍ چھس بہ وونۍ واریاہ کالہ پیٹھہ فیس بکس تہ روشۍ روشی وچھان، بلاگ تہ رود طاقچس پیٹھ، پرن لیکھن تہِ چھہ بند۔ نہ چھیہ اورچ خبر کانہہ، نہ یورچ۔ مگر اکھ سیٹھا خوش گوار خبر وٲژ زِ الطاف اندرابی صابنس نیرۍ پوش رسالس دراو تازہ شمارہ۔ یہ رسالہ چھہ منزۍ منزۍ سہی پاکستانہ آزاد کشیرِ پیٹھہ برابر نیران۔ معاصر کاشرین رسالن منز چھہ یہ رسالہ تواتر کہ رنگہ تہ معیار کہ رنگہ اکھ سیٹھا رت اضافہ، بلکہ ونہ بہ زِ  یوتاہ خۅش یون رسالہ چھہ ہندوستانۍ کشیرِ منز خالے نظرِ گژھان۔

الطاف صابنۍ رسالہ کہ تعلقہ محنت تہ کاشرِ زبانۍ تہ ادبس سیتۍ یہند لول چھیہ نہ کانہہ کھٹتھ کتھ کشیرِ ہندس اتھ اندس منز روزتھ کاشرس ادبس لول برن، مواد جمع کرن تہ کمپوز کرناون، پروف پرن تہ پرنٹ کرناون چھیہ نہ سہل کتھ۔ یم چھہِ شابشی ہندۍ مستحق۔

نیرۍ پوش رسالہ چھہ ہمیشہ پنن اکھ الگ انہار ہیتھ برونہہ کن یوان۔ اتھ سلسلس منز کرۍ امۍ معیارہ رنگۍ واریاہ منزلہ طے۔ ادبک کانہہ تہِ انہار ٲسن معیار گژھہِ نہ بالاے طاق تھاون۔ یہ میزان قایم کرن چھہ نہ سہل۔ امہ رنگہ چھہ الطاف اندرابی صاب بالغ نظری ہند ثبوت دوان۔ ازکس شمارس منز شامل مضمون، افسانہ، نظم و نثر، تمام چیز چھہِ اکہ صحت مند تہ باگہ برتہِ ادبچ خبر دوان۔ اتھ منز چھہ بزرگ ادیبن تہِ جاے شیرنہ آمژ تہ نوجوانن تہِ۔ کشیرِ ہندِ یمہ طرفہ کین ادیبن تہِ تہ ہمہِ طرفہ کین ادیبن تہِ۔ یہ چھہ سانہِ معاصر ادبک اکھ مکمل ٲنہ۔

الطاف اندرابی چھہِ پانہ اکھ رت ادیب۔ یم چھہ شاعری تہِ کران تہ فکشن تہِ لیکھان یمکۍ نمونہ نیرۍ پوش کس یتھ شمارس منز "ویتھ روزِ پکان” نظمہِ تہ ڈراما "وۅستہ گل گبہ ساز”چھہِ۔

یم چھہِ میانۍ پاٹھۍ کاشرِ ادبہ چہ سرگرمی ہندِ مرکزہ نشہِ ہنا دور مگر یس دنیا یمو اتہِ پننیو ذاتی کوششو سیتۍ آباد  کۆر تمہِ بنیوو کشیرِ ہند یہ اند اکھ نۆو مرکز۔ میہ چھیہ وۅمید کشیرِ، کاشرس کلچرس تہ ادبس سیتۍ دلچسپی تھاون والۍ برن اتھ رسالس تہ الطاف صابنین کوششن لول۔

رسالہ منگنٲوو تہ پٔریو۔