کاشر رسالہ واد (قسط 8) : شفیع شوق


shauq-Yaad
وادس منز چھپیہ شفیع شوق سندۍ کل تریہ غزل۔ اکھ شمارہ 2 تہ زہ شمارہ 11 ہس منز۔ یم تریشوے غزل چھہِ شوق سنزِ شعرہ سۅمبرنہِ ‘یاد آسمانن ہنز’ منز پوتس شامل کرنہ آمتۍ مگر اکثر شعر چھہِ دوبارہ لیکھتھ بہتر بناونہ آمتۍ ۔ اکثر چھہِ خیال تمے البتہ چھہِ زبان تہ پیکر زیادہ موافق تہ اثردار بناونہ آمتۍ۔

شوق سند غزل اوس وقتہ کہ جبرہ کس نتیجس منز فرد سنزِ بے چارگی رنگہ رنگہ پیش کران۔ یہ بے چارگی چھیہ کنہِ کنہِ خۅد فریبی ہنز شکل تہِ رٹان تہ طنز تہِ چھہ بارسس یوان۔ امۍ سندس غزلس منز چھیہ زیادہ ٹھوس تہ جسمانی لفظ، پیکر تہ استعارہ ورتٲوتھ اکھ الگ وتھ کڈنچ کوشش۔ امس چھہ شعر ظاہری ہیژ علاوہ مضمونو رنگۍ تہِ ازۍ کین فکری تقاضن ہم آہنگ بناونک شوق۔ یہ چھہ پامال مضمونن نشہ پنن غزل شعوری طور دور رٹان۔

واریاہن شاعرن برعکس چھہ نہ شوق سند غزل رسالس منز راوان، بلکہ چھہ یہ یکدم پانس کن متوجہ کران۔ کینہہ شعر:

موسم ڈٔلتھ تہِ کل چھیہ خیالس بہ کیا ونس
خوشبو لبُن یژھاں چھہ گلابس بہ کیا ونس

ڈج وڈرِ پتھ یہ ڈولۍ تہ ڈلۍ نظرِ تاپہ پرنگ
یتھ جایہ تیۍ کہرۍ میہ ونیم وس بہ کیا ونس

پشرن میہ پرانۍ بانہ ڈۅکرۍ وس دوپن ژہ گر
ہیوکمے نہ دِتھ گرتھ میہ موادس بہ کیا ونس

شہرس اگر سرحد چھہ کڈاں کاڈ ژۅاپارۍ
پریتھ کانسہِ پنن حلقہ ژمان کیازِ چھہ باسان

یُس یوت کراں جشنہ زِ آزاد چھہ آدم
سے تیوت مگر پانہ پھسان کیازِ چھہ باسان

خوفہ ہتۍ ٲسۍ اکھ اکس لٲرتھ
اتحادک کمال ہاواں ٲسۍ

از بہ وچھتھس شنلۍ سِرن ہند وٹھ
زیرِ پھۅلہو تہ وۅندہ باواں ٲسۍ

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s